تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
چار عرب خواتین دنیا کی 100 بااثر شخصیات میں شامل
جرمن چانسلر اینجیلا مرکل بدستور فہرست میں پہلے نمبر پر ہیں
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

ہفتہ 22 ذوالحجہ 1440هـ - 24 اگست 2019م
آخری اشاعت: جمعہ 30 رجب 1435هـ - 30 مئی 2014م KSA 19:45 - GMT 16:45
چار عرب خواتین دنیا کی 100 بااثر شخصیات میں شامل
جرمن چانسلر اینجیلا مرکل بدستور فہرست میں پہلے نمبر پر ہیں
یو اے ای کی شیخہ لبنیٰ القاسمی فوربس میگزین کی فہرست میں پچپنویں نمبر پر ہے۔
العربیہ ڈاٹ نیٹ

فوربس میگزین کی جانب سے اسی ہفتے جاری کردہ دنیا کی ایک سو بااثر خواتین کی فہرست میں چار خلیجی عرب خواتین بھی شامل ہیں۔

فوربس کی درجہ بندی میں متحدہ عرب امارات کی وزیر شیخہ لبنیٰ القاسمی کا پچپنواں نمبر ہے۔وہ یو اے ای کی کابینہ میں شامل ہونے والی پہلی خاتون وزیر تھیں۔انھیں 2004ء میں اقتصادی امور کی وزارت کا قلم دان سونپا گیا تھا۔فوربس کی گذشتہ سال جاری کردہ فہرست میں ان کا سڑسٹھواں نمبر تھا۔

انھوں نے امریکی ریاست کیلی فورنیا کی شیکو یونیورسٹی سے 1981ء میں کمپیوٹر سائنس میں بیچلر ڈگری حاصل کی تھی اور شارجہ میں قائم امریکی یونیورسٹی سے ایگزیکٹو ایم بی اے کی ڈگری حاصل کی تھی۔

امارات کی ایک کاروباری شخصیت فاطمہ الجابر دنیا کی ایک سو بااثر خواتین میں چورانوے نمبر پر ہیں۔وہ اماراتی بزنس ویمن کونسل کی چئیرپرسن ہیں۔سعودی عرب کی کاروباری شخصیت لبنیٰ علیان چھیاسویں اور قطر کی میسا الثانی اکانوے نمبر پر ہیں۔

جرمن چانسلر اینجیلا مرکل اس فہرست میں بدستور پہلے نمبر پر ہیں۔وہ گذشتہ سال بھی اس فہرست میں پہلے نمبر پر تھیں۔دنیا کی پہلی پانچ بااثر خواتین میں امریکا کے فیڈرل ریزرو کی چئیرپرسن جینٹ ییلین ،بل اینڈ میلنڈا گیٹس فاؤنڈیشن کی میلنڈا گیٹس ،برازیل کی صدر ڈیلما روسیف ، عالمی مالیاتی فنڈ کی سربراہ کرسٹین لاگاردے بالترتیب دوسرے ،تیسرے ،چوتھے اور پانچویں نمبر پر ہیں۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند