تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
40 سال سے حجاج کرام کے بچوں کی دیکھ بحال کرنے والے رضا کار کے حالات و خیالات
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 18 محرم 1441هـ - 18 ستمبر 2019م
آخری اشاعت: بدھ 12 ذوالحجہ 1440هـ - 14 اگست 2019م KSA 18:42 - GMT 15:42
40 سال سے حجاج کرام کے بچوں کی دیکھ بحال کرنے والے رضا کار کے حالات و خیالات
العربیہ ڈاٹ نیٹ

سعودی عرب میں حج کا سیزن میں بالخصوص اور عمرہ سیزن میں بالعموم بڑی تعداد میں رضاکار عازمین حج وعمرہ کی خدمت میں پیش پیش رہتے ہیں۔ ان میں ایک سعودی رضاکار ناصر الخلیفی مسلسل 40 سال سے حج کے لیے آنے والے حجاج کرام کی بچوں کی دیکھ بحال میں مصروف ہیں۔ الخلیفی حج کے دوران اپنے والدین سے بچھڑ جانے والے بچوں کو تلاش کرکے مشاعر مقدسہ میں عمومی سروسز کیمپ میں پہنچاتے ہیں جہاں ان بچوں کو ان کے والدین سے ملا دیا جاتا ہے۔

سعودی عرب کی حجاج کرام کے لیے رضاکار تنظیم الکشافہ السعودیہ سے وابستہ ناصرالخلیفی نے حجاج کرام کے بچوں کی دیکھ بحال کا مشن چالیس سال پیشتر شروع کیا۔

سعودی عرب کی سرکاری نیوز ایجنسی 'ایس پی اے' کی طرف سے حجاج کرام کے بچوں کی دیکھ بحال کرنے والے اس عظیم رضاکار کی تصاویر شائع کی ہیں۔ ڈھلتی عمر کے باوجود وہ ہشاش بشاش، خوش وخرم اور ہنستے مسکراتے دیکھے جاسکتے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے الخلیفی نے کہا میری زندگی کے حالیہ چالیس سال بہت قیمتی اور خوبصورت ہیں۔ ہم چوبس گھنٹے حجاج کرام کے گم ہونے والے بچوں کی تلاش کرکے انہیں ان کے والدین سے ملانے کی کوشش جاری رکھتے ہیں۔ ان کاکہنا ہے کہ والدین سے جدا ہونے والے بچوں کو ملنے پرانہیں تحائف دیے جاتے ہیں۔ انہیں کھلونے، نرم کمبل، کپڑے کھانے کی اشیا اور مٹھائیاں دی جاتی ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں ناصر الخلیفی نے بتایا کہ اس نے نوجوانی کی عمر میں ہی حجاج کرام کی خدمت شروع کردی تھی۔ تعلیم سے فراغت کے بعد ملازمت کے ساتھ ساتھ حجاج کرام کی خدمت کو اپنا مشن اور شعار بنا لیا۔