تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
افغانستان:طالبان نے صوبائی امیدوار کو اغوا کر لیا
شمالی صوبہ قندوز میں بم دھماکے میں پانچ محافظ مارے گئے
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

جمعرات 8 شعبان 1441هـ - 2 اپریل 2020م
آخری اشاعت: پیر 29 جمادی الاول 1435هـ - 31 مارچ 2014م KSA 20:28 - GMT 17:28
افغانستان:طالبان نے صوبائی امیدوار کو اغوا کر لیا
شمالی صوبہ قندوز میں بم دھماکے میں پانچ محافظ مارے گئے
افغانستان میں آیندہ ہفتے کے روز نئے صدر اور چونتیس صوبائی کونسلوں کے انتخاب کے لیے ووٹ ڈالے جائیں گے۔
کابل۔العربیہ ڈاٹ نیٹ ،ایجنسیاں

افغانستان کے شمالی صوبہ سرائے پل میں طالبان مزاحمت کاروں نے صوبائی کونسل کا انتخاب لڑنے والے ایک امیدوار کو اس کے چھے ساتھیوں سمیت اغوا کر لیا ہے اور قندوز میں بم دھماکے میں پانچ افراد مارے گئے ہیں۔

سرائے پُل کے گورنر عبدالجبار حق بین نے صحافیوں کو بتایا ہے کہ ''انتخابی امیدوار حسین نزاری اور اس کے چھے ساتھیوں کو اتوار کی رات اغوا کیا گیا تھا۔وہ اس وقت ضلع سنچارک سے انتخابی مہم کے بعد سرائے پُل کے صوبائی دارالحکومت کی جانب آرہے تھے۔حملہ آوروں نے انھیں ان کی ٹیکسی سے اتارا اور اپنے ساتھ لے گئے''۔

افغان سکیورٹی فورسز نے ان یرغمالیوں کی بازیابی اور اغوا کاروں کی تلاش کے لیے سکیورٹی آپریشن شروع کردیا ہے۔درایں اثناء ایک اور شمالی صوبہ قندوز میں سڑک کے کنارے نصب بم کے دھماکے میں ایک مقامی ملیشیا کے کمانڈر کے پانچ محافظ مارے گئے ہیں۔

افغانستان کے شمالی صوبوں میں تشدد کے یہ واقعات دارالحکومت کابل میں طالبان مزاحمت کاروں کے انتخابی دفاتر اور غیر ملکیوں کے زیراستعمال ہوٹلوں پر حملوں کے بعد رونماہوئے ہیں۔افغانستان میں آیندہ ہفتے کے روز نئے صدر اور چونتیس صوبائی کونسلوں کے انتخاب کے لیے ووٹ ڈالے جائیں گے۔

گذشتہ ہفتے کے روز طالبان جنگجوؤں نے کابل میں آزاد الیکشن کمیشن کے ہیڈ کوارٹرز پر حملہ کیا تھا۔انھوں نے نزدیک واقع ایک عمارت میں گھس جانے کے بعد وہاں سے انتخابی دفاتر کی قلعہ نما عمارت کی جانب راکٹ فائر کیے تھے اور فائرنگ کی تھی لیکن چھے گھنٹے کی لڑائی کے بعد افغان سکیورٹی فورسز نے تمام پانچ حملہ آوروں کو ہلاک کردیا تھا لیکن واقعے میں کوئی اور شخص ہلاک نہیں ہوا تھا۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند