تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
شام میں روس کے ایس-300 میزائل دفاعی نظام کی تنصیب
شامی صدر بشارالاسد کی حمایت میں امریکا کے ممکنہ کروز میزائل حملے کو روکنے کے لیے اقدام
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

جمعرات 25 جمادی الثانی 1441هـ - 20 فروری 2020م
آخری اشاعت: منگل 2 محرم 1438هـ - 4 اکتوبر 2016م KSA 20:08 - GMT 17:08
شام میں روس کے ایس-300 میزائل دفاعی نظام کی تنصیب
شامی صدر بشارالاسد کی حمایت میں امریکا کے ممکنہ کروز میزائل حملے کو روکنے کے لیے اقدام
روس کے فضائی دفاعی نظام آنٹے 2500 یا ایس-300 وی ایم کی ماسکو کے نواح میں واقع زوکوفسکی میں فضائی مظاہرے کے دوران نمائش کی جارہی ہے۔ فائل تصویر
ماسکو ۔ ایجنسیاں

روس کی وزارت دفاع نے شام کے ساحلی شہر طرطوس میں واقع اپنے بحری اڈے پر ایس-300 میزائل دفاعی نظام بھیجا ہے اور کہاہے کہ اس سے بحری اڈے کی سکیورٹی کو مزید مضبوط بنانے میں مدد ملے گی۔

وزارت دفاع کے ترجمان آئیگور کوناشینکوف نے منگل کے روز ایک بیان میں بعض نیوز رپورٹس کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ '' ایس- 300 طیارہ شکن میزائل نظام کو عرب جمہوریہ شام میں (تنصیب کے لیے) بھیج دیا گیا ہے''۔

روسی ترجمان کے اس بیان سے قبل امریکی نیوز ٹیلی ویژن اسٹیشن فاکس نیوز نے تین امریکی عہدے داروں کے حوالے سے یہ اطلاع دی تھی کہ ''روس نے پہلی مرتبہ شام میں جدید طیارہ شکن نظام نصب کردیا ہے''۔

ان عہدے داروں کا کہنا تھا کہ اس نئے میزائل سسٹم کے ذریعے امریکا کے شام میں کسی بھی ممکنہ کروز میزائل کے حملے کو روکا جاسکتا ہے۔روس کی جانب سے شامی صدر بشارالاسد کی حمایت میں یہ میزائل دفاعی نظام ایک نیا تحفہ ہے۔

فاکس نیوز نے ایک مغربی عہدے دار کے انٹیلی جنس کے کے ایک حالیہ جائزے کے حوالے سے بتایا ہے کہ روس نے پہلی مرتبہ اپنی سرحدوں سے باہر ایس-اے 23 سسٹم کو نصب کیا ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند