تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
چین کا فرانسیسی بحری جہاز آبنائے تائیوان میں روکنے کا دعویٰ
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

ہفتہ 17 ذیعقدہ 1440هـ - 20 جولائی 2019م
آخری اشاعت: جمعہ 20 شعبان 1440هـ - 26 اپریل 2019م KSA 07:17 - GMT 04:17
چین کا فرانسیسی بحری جہاز آبنائے تائیوان میں روکنے کا دعویٰ
بیجنگ ۔ ایجنسیاں

چین کی نیول فورس نے اپریل کے اوائل میں آبنائے تائیو میں داخلے کی کوشش کے دوران فرانس کے ایک بحری جہاز کو روکنے کا دعویٰ کیا ہے۔

چینی وزارت دفاع کےترجمان رین گوکیانگ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ فرانسیسی نیوی کا جہاز آبنائے تائیوان میں داًخل ہونے کی کوشش کےدوران روک لیا گیا تھا۔ اس کے بعد بیجنگ کی جانب سے پیرس سے اس واقعے پرباضابطہ احتجاج کیا گیا۔

ترجمان نے مزید کہا کہ فرانسیسی نیوی کا بحری جہاز چین کی اجازت کےبغیر علاقائی پانی میں داخل ہونے کی کوشش کررہا تھا۔ خیال رہے کہ چین تائیوان کو اپنا حصہ سمجھتا ہے۔

ترجمان نے کہاکہ فرانسیسی جہاز کی آبنائے تائیوان میں داخلے کی کوشش کےدوران مروجہ قانون کے تحت ایک جہاز اسے روکنےلیے بھیجا گیا۔ فرانسیسی جہاز کو واپس جانے کے احکامات دیے گئے جس کےبعد وہ واپس ہوگیا۔

چینی وزارت دفاع کے ترجمان نے آبنائے تائیوان کی طرف آنے والے فرانسیسی جہاز کی شناخت نہیں بتائی۔ دوسری جانب چین کی طرف سے چینی دعوے پر کوئی رد عمل سامنے نہیں آیا۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند