تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
افغان صدر کا کابل میں خودکش بم دھماکے کے بعد داعش کی محفوظ پناہ گاہیں تباہ کرنے کا عزم
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 16 محرم 1441هـ - 16 ستمبر 2019م
آخری اشاعت: پیر 17 ذوالحجہ 1440هـ - 19 اگست 2019م KSA 14:46 - GMT 11:46
افغان صدر کا کابل میں خودکش بم دھماکے کے بعد داعش کی محفوظ پناہ گاہیں تباہ کرنے کا عزم
کابل ۔ ایجنسیاں

افغان صدر اشرف غنی نے ملک میں سخت گیر جنگجو گروپ داعش کی تمام محفوظ پناہ گاہیں تباہ کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔

افغان دارالحکومت کابل میں ہفتے کی شب شادی کی ایک تقریب میں خودکش بم دھماکے کے نتیجے میں 63 افراد ہلاک اور182 زخمی ہوگئے تھے۔ ماتم کدہ میں تبدیل ہونے والی شادی کی اس تقریب میں ایک ہزار سے زیادہ افراد شریک تھے۔افغانستان کا آج ایک سوواں یومِ آزادی منایا جارہا ہے اور دہشت گردی کے اس اندوہ ناک واقعے کا ملک میں سوگ بھی منایا جارہا ہے۔

سخت گیر جنگجو گروپ داعش نے اس بم حملے کی ذمے داری قبول کرنے کا دعویٰ کیا تھا جبکہ طالبان نے ایک بیان میں سوال اٹھایا ہے کہ امریکا داعش کے حملہ آوروں کی پیشگی شناخت میں کیوں ناکام رہا ہے؟طالبان نے یومِ آزادی کے موقع پر ایک اور بیان میں کہا ہے کہ ’’افغانستان کو افغانوں کے لیے خالی کردیا جائے۔‘‘

دریں اثناء طالبان سے مذاکرات کرنے والے امریکا کے خصوصی ایلچی برائے افغانستان زلمے خلیل زاد نے کہا ہے کہ داعش کے وابستگان کو شکست سے دوچار کرنے میں افغانستان کی مدد کے لیے امن عمل تیز کیا جانا چاہیے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند