تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
سوڈان: حزبِ اختلاف کی درخواست پر خودمختار کونسل کی تشکیل 48 گھنٹے کے لیے ملتوی
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 16 محرم 1441هـ - 16 ستمبر 2019م
آخری اشاعت: پیر 17 ذوالحجہ 1440هـ - 19 اگست 2019م KSA 10:52 - GMT 07:52
سوڈان: حزبِ اختلاف کی درخواست پر خودمختار کونسل کی تشکیل 48 گھنٹے کے لیے ملتوی
سوڈان میں عبوری معاہدہ کے دستخط کے موقع
العربیہ ڈاٹ نیٹ

سوڈان میں حزب اختلاف کی درخواست پر مجوزہ خودمختار کونسل کی تشکیل 48 گھنٹے کے لیے ملتوی کردی گئی ہے۔

سوڈان کی حکمراں عبوری فوجی کونسل نے سوموار کو ایک بیان میں کہا ہے کہ حزبِ اختلاف کے اتحاد برائے آزادی اور تبدیلی کا کونسل کے لیے اپنے پانچ ارکان کے ناموں پر اتفاق نہیں ہوا ہے اور اس نے اتفاق رائے سے اپنے ان ارکان کے انتخاب تک کونسل کی تشکیل ملتوی کرنے کی درخواست کی ہے۔

قبل ازیں گذشتہ روز یہ اطلاع سامنے آئی تھی کہ حزبِ اختلاف نے باہمی سمجھوتے کے تحت قائم ہونے والی خود مختار کونسل کے لیے اپنے پانچ ارکان نامزد کردیے ہیں۔ سوڈان کے موجودہ عبوری حکمراں اور مسلح افواج کے سربراہ جنرل عبدالفتاح البرہان کے زیر قیادت گیارہ ارکان پر مشتمل اس نئی خودمختار کونسل نے آج حلف اٹھانا تھا۔

حکمراں عبوری فوجی کونسل کی قیادت اور حزبِ اختلاف کے لیڈروں کے درمیان ہفتے کے روز عبوری مدت کے لیے شراکت اقتدار کا ایک سمجھوتا طے پایا تھا۔اس کے تحت پہلے عبوری حکومت تشکیل دی جارہی ہے اور پھر بتدریج ملک میں نئے عام انتخابات کے انعقاد کی راہ ہموار ہوگی۔

مجوزہ خود مختار کونسل ملک کی اعلیٰ اختیاراتی اتھارٹی ہوگی۔ تاہم انتظامی اختیارات کابینہ کے وزراء کو حاصل ہوں گے۔شراکت اقتدار کے فارمولے کے تحت اس کے پانچ ارکان کا عبوری فوجی کونسل انتخاب کرے گی جبکہ پانچ ارکان حزبِ اختلاف کا اتحاد نامزد کرے گا۔ ایک رکن کا دونوں فریق متفقہ طور پر انتخاب کریں گے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند