تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
بچی کے بےباک رقص نے پاپائے روم پوپ فرانسس کو بھی خاموش کرا دیا
بچی کی پاپائے روم کے سامنے رقص کی ویڈیو وائرل
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 18 محرم 1441هـ - 18 ستمبر 2019م
آخری اشاعت: جمعرات 20 ذوالحجہ 1440هـ - 22 اگست 2019م KSA 13:05 - GMT 10:05
بچی کے بےباک رقص نے پاپائے روم پوپ فرانسس کو بھی خاموش کرا دیا
بچی کی پاپائے روم کے سامنے رقص کی ویڈیو وائرل
لندن ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ، ایجنسیاں

پاپائے روم ویٹیکن کے سربراہ ہونے کے ساتھ عالم عیسائیت کے متعبر مذہبی پیشوا مانے جاتے ہیں۔ ان کے سامنے رقص وسرود تو کجا کسی معمولی بد تہذیبی کی بھی گنجائش نہیں مگر ایک کم عمرلڑکی نےبے باکی کامظاہرہ کرتے ہوئے پاپائے روم کے سامنے رقص پیش کرکے انہیں بھی حیران کردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق پاپائے روم پوپ فرانسس اول کے سامنے ایک بچی کے رقص کی ویڈیو سوشل میڈیا پربڑے پیمانے پروائرل ہوئی ہے۔ دو منٹ کی اس ویڈیو میں پاپائے روم کو صبر جمیل اور روادارای کا بھرپور مظاہرہ کرتے دیکھا جاسکتا ہے۔ ویٹیکن کے 'پولس ہال پنجم' میں ایک دعائیہ تقریب میں شرکاء کو وعظ کررہے تھے۔ اس ہال میں کوئی ایک ہزار کے قریب لوگ موجود تھے۔ اس دوران اچانک ایک بچی ہال میں سے نکلی اور اس نے پاپائے روم کے سامنے بے باکی کے ساتھ ڈانس شروع کردیا۔ لڑکی نے اس لاپرواہی کا مظاہرہ کیا جیسے کچھ ہوا ہی نہیں اور وہ عام بچوں کی محفل میں ہے۔

وہ ڈانس کرتی اور گاتی گئی۔ سیکیورٹی کےعملے نے بچی کو وہاں سے ہٹانے کی کوشش کی مگر پاپائے روم نے انہیں منع کردیا اور کہا کہ 'اسے اس کے حال پرچھوڑ دو۔ بعض اوقات پروردگار بچوں کے ذریعے ہم سے بات کرتا ہے'۔ ان کے یہ الفاظ سوشل میڈیا پر وسیع پیمانے پر وائرل ہونے والی فوٹیج میں بھی سنے جاسکتے ہیں۔ سوشل میڈیا پروائرل ہونے والی یہ ویڈیو تیزی کے ساتھ جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی جسے دنیا کی مختلف زبانوں میں تک لاکھوں لوگ پسند کرچکے ہیں۔ رقص کرتے ہوئے لڑکی بعض دفعہ پاپائے روم کے انتہائی قریب چلی جاتی اور ان کے سامنے جھک جاتی۔ ایک بار وہ پاپائے روم کے ایک میٹر قریب تک چلی گئی۔ وہاں سے اس نے شرکاء کی طرف دیکھا جنہوں نے گرم جوشی کے ساتھ تالیاں بجا کر اسے داد تحسین پیش کی۔

لڑکی کے رقص کے بعد پاپائے روم نے ایک بارپھرحاضرین مجلس کومخاطب کرتے ہوئے بات شروع کی۔ انہوں نے لڑکی کے ڈانس کی طرف توجہ دلاتے ہوئے کہا کہ 'ہم سب نے ابھی ایک بچی کو رقص کرتے دیکھا۔ یہ بچی بے حد خوبصورت تھی مگر یہ بے چاری بچی ایک مرض کا شکار ہے۔ مجھے اس کی کوئی پرواہ نہیں کہ اس نے کیا کیا۔ میں آپ سب لوگوں سے پوچھتا ہوں کہ کیا آپ میں سے کسی نے خلوص دل کے ساتھ اس بچی کی صحت یابی کے لیے دعا کی۔ کیا اس کے والدین اور دیگر افراد خانہ کے بارے میں دعا کی۔ ہم میں سے ہرشخص کو چاہیے کہ جب وہ دوسرے کو تکلیف میں دیکھے تو اس کے حق میں دعا کرے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند