تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
کابل حملے کے بعد ٹرمپ نے طالبان کے ساتھ مذاکرات منسوخ کر دیے
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 21 صفر 1441هـ - 21 اکتوبر 2019م
آخری اشاعت: اتوار 8 محرم 1441هـ - 8 ستمبر 2019م KSA 08:18 - GMT 05:18
کابل حملے کے بعد ٹرمپ نے طالبان کے ساتھ مذاکرات منسوخ کر دیے
امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ
العربیہ ڈاٹ نیٹ – ایجنسیاں

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے افغان طالبان رہ نماؤں کے ساتھ امن مذاکرات منسوخ کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ یہ اعلان طالبان کی جانب سے کابل میں ہونے والے حملے کی ذمے داری قبول کرنے کے بعد سامنے آئی ہے۔ حملے میں ایک امریکی فوجی اور 11 دیگر افراد ہلاک ہوئے۔

اتوار کے روز اپنی ٹویٹ میں ٹرمپ نے کہا کہ "اگر امن بات چیت کے دوران بھی طالبان کے لیے فائر بندی ممکن نہیں تو پھر انہیں ایک سنجیدہ معاہدے کے لیے مذاکرات کرنے کی قوت بھی حاصل نہیں۔

یاد رہے کہ کابل کے ایک علاقے میں ہونے والے کار بم دھماکے میں کم از کم 10 افراد ہلاک اور 42 زخمی ہو گئے۔ اس علاقے میں امریکی سفارت خانہ، نیٹو مشن اور دیگر سفارتی مشن بھی واقع ہیں۔ نیٹو اتحاد نے حملے میں امریکا اور رومانیہ کے ایک، ایک فوجی کے ہلاک ہونے کا اعلان کیا ہے۔

جمعرات کے روز ہونے والا دھماکا اس وقت ہوا جب امریکی ایلچی کابل میں افغان حکومت کو طالبان کے ساتھ ایک معاہدے تک پہنچنے کے حوالے سے مطلع کر رہے تھے جس کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ یہ ابتدائی نوعیت کا ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند