تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
شادی کی پہلی سیلفی زندگی کی آخری تصویر ثابت ہوئی!
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

جمعہ 17 ربیع الاول 1441هـ - 15 نومبر 2019م
آخری اشاعت: بدھ 9 صفر 1441هـ - 9 اکتوبر 2019م KSA 08:37 - GMT 05:37
شادی کی پہلی سیلفی زندگی کی آخری تصویر ثابت ہوئی!
’’بھارت میں 2011 سے 2017 کے دوران سیلفی لیتے ہوئے 259 لوگ ہلاک ہو گئے تھے‘‘
ایجنسیاں، دبئی ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

بھارت میں ایک نو بیاہتا خاتون اور ان کے خاندان کے دیگر تین افراد دریا کنارے سیلفی لینے کی کوشش میں ڈوب کر ہلاک ہو گئے۔ پولیس کے مطابق چار افراد کے سیلفی لیتے ہوئے ڈوبنے کا واقعہ بھارت کی ریاست ہریانہ میں پیش آیا ہے۔

خبر رساں ادارے پریس ٹرسٹ آف انڈیا نے ایک پولیس آفیسر کے حوالے سے بتایا کہ دلہن سمیت چھ لوگوں کا گروپ ایک دوسرے کا ہاتھ پکڑ کر سیلفی لینے کے لیے دریا کنارے کھڑا تھا۔  اس دوران ان میں سے ایک خاتون نے دریا کے اندر پانی میں موجود گھڑے میں قدم رکھ لیا جس سے ان کا پاؤں پھسل گیا۔

وہ پل جہاں سے سیلفی لینے کی کوشش میں شوقین جوڑے کی جان گئی

پولیس آفیسر کے مطابق جب خاتون کا پاؤں پھسل گیا اور وہ گرنے لگی تو انہوں نے اپنے ساتھ دوسروں کو بھی کھینچ لیا۔ رپورٹ کے مطابق خاتون کے شوہر نے ان میں سے ایک عورت کو بچا لیا۔ تاہم ان کی بیوی اور ایک 14 سالہ لڑکے سمیت باقی تمام افراد ڈوب گئے۔

گذشتہ سال آل انڈین انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز کی جانب سے کی جانے والی ایک تحقیق میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ بھارت میں 2011 سے 2017 کے دوران سیلفی لیتے ہوئے 259 لوگ ہلاک ہو گئے تھے۔

تحقیق کے مطابق اس دورانیے میں سیلفی لینے ہوئے سب سے زیادہ ہلاکتیں بھارت میں رپورٹ ہوئی تھیں۔ دوسرے نمبر پر روس، تیسرے پر امریکا اور چوتھے پر پاکستان تھا۔
 

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند