تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
سعودی عرب میں امریکی فوجیوں کی تعیناتی سے ایران کو توانا پیغام جائے گا:برائن ہُک
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

ہفتہ 19 صفر 1441هـ - 19 اکتوبر 2019م
آخری اشاعت: ہفتہ 12 صفر 1441هـ - 12 اکتوبر 2019م KSA 21:42 - GMT 18:42
سعودی عرب میں امریکی فوجیوں کی تعیناتی سے ایران کو توانا پیغام جائے گا:برائن ہُک
امریکا کے خصوصی ایلچی برائے ایران برائن ہُک
العربیہ ڈاٹ نیٹ

امریکا کے خصوصی ایلچی برائے ایران برائن ہُک نے کہا ہے کہ سعودی عرب کو اضافی امریکی فوجی اور فوجی سازوسامان بھیجنے سے ایرانی نظام کو ایک طاقتور پیغام جائے گا۔

برائن ہُک نے العربیہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ’’اس وقت ایران کی حالت ویسی ہوچکی ہے جس کو ہم ’افراتفری والی جارحیت‘ کا نام دیتے ہیں۔میرے خیال میں چودہ ستمبر کو سعودی عرب میں تیل کی تنصیبات پر حملے ایک کمزوری کی علامت تھے اور یہ اس بات کا بھی اشارہ ہیں کہ ہمارے دباؤ سے اس نظام پر بڑے اثرات مرتب ہورہے ہیں۔‘‘

پینٹاگان نے جمعہ کو تین ہزار اضافی امریکی فوجیوں اور فوجی آلات کو سعودی عرب میں بھیجنے کی منظوری کی تصدیق کی تھی۔سعودی آرامکو کی تنصیبات پر حملوں کے بعد ان امریکی فوجیوں کی آمد سے مملکت کے دفاع کو تقویت ملے گی۔

پینٹاگان کے بیان کے مطابق وزیر دفاع مارک ایسپر نے سعودی عرب میں دو مزید پیٹریاٹ میزائل بیٹریز ، ایک تھاڈ بیلسٹک میزائل دفاعی نظام کی تنصیب ،دو لڑاکا اسکواڈرن اور فضائیہ کے ایک ونگ کو بھیجنے کی منظوری دی تھی۔

مسٹر برائن ہُک کا کہنا تھا کہ ’’ سعودی عرب امریکا کا سکیورٹی شراکت دار ہے اور خطے میں ہمارے مفادات مشترک ہیں۔بالخصوص ہم ایران کی جارحیت کو روک لگانا چاہتے ہیں۔‘‘

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند