تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
روسی صدر کی طرف سے سعودی ولی عہد کے لیے 30 ہزار سال پرانا تحفہ کیا تھا؟
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 22 ربیع الاول 1441هـ - 20 نومبر 2019م
آخری اشاعت: بدھ 16 صفر 1441هـ - 16 اکتوبر 2019م KSA 08:15 - GMT 05:15
روسی صدر کی طرف سے سعودی ولی عہد کے لیے 30 ہزار سال پرانا تحفہ کیا تھا؟
العربیہ ڈاٹ نیٹ ۔ ابراہیم الحسین

حال ہی میں روسی صدر ولادی میر پوتین نے اپنے دورہ سعودی عرب کے دوران سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کو 30 ہزار سال پرانے ہاتھی کے دانت سے بنا ایک فن پارہ تحفے میں پیش کیا۔ ہاتھی کا یہ دانت ماہرین آثار قدیمہ کو سنہ 2012ء کو شمالی سائبریا سے ملا تھا۔ ماہرین کا دعویٰ ہے کہ بن سہاتھی کا یہ دانت 30 ہزار سال پرانا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق روسی صدر ولادی میر پوتین کی طرف سے سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کو دیےگئے تحفے کے سوشل میڈیا پربھی چرچے ہیں۔

یہ تحفہ ایک انمول نوادرات کا حامل ہے۔ اس طرح کے تحائف بین الاقوامی پروٹوکول کے تحت سربراہان مملکت ایک دوسرے کو دیتے رہتے ہیں۔ تاہم روسی صدر ولادی میر پوتین کی طرف سے سعودی ولی عہد کو دیا گیا بیش قیمت تحفہ ایک نادرو نایاب تحفہ سمجھا جاتا ہے۔

روسی صدر کی طرف سے یہ گراں قیمت تحفہ دارالحکومت کی ثقافتی شہر الدرعیہ میں تاریخی مقام وادی حنیفہ کے دورے کے دوران دیا۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند