تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
ہانگ کانگ : پولیس اہل کار نے مظاہرے میں شریک نوجوان کے سینے میں گولی مار دی
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

اتوار 17 ربیع الثانی 1441هـ - 15 دسمبر 2019م
آخری اشاعت: منگل 14 ربیع الاول 1441هـ - 12 نومبر 2019م KSA 12:28 - GMT 09:28
ہانگ کانگ : پولیس اہل کار نے مظاہرے میں شریک نوجوان کے سینے میں گولی مار دی
لندن – العربیہ ڈاٹ نیٹ ، ایجنسیاں

ہانگ کانگ میں جاری احتجاج کے دوران پیر کے روز جذباتی پولیس اہل کار نے براہ راست فائرنگ کرتے ہوئے مظاہرین میں شامل ایک نوجوان کے سینے میں گولی مار دی۔ اس کے نتیجے میں یہ نوجوان میڈیا کے افراد اور فوٹوگرافروں کے سامنے سڑک پر پڑا تڑپنے لگا جو اُس وقت Sai Wan Ho کے علاقے میں احتجاج کی کوریج کے لیے وہاں موجود تھے۔ اس دوران پولیس اہل کار اور ہنگامہ آرائی کے انسداد کی فورس نے بقیہ مظاہرین کا تعاقب کیا جن میں اکثریت طلبہ کی تھی۔ یہ مظاہرے 5 ماہ قبل شروع ہوئے تھے اور مظاہرینHong Kong کے امور اور آزادی میں چینی حکام کی مداخلت کے خلاف سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں۔ چینی حکام 1997 میں ہانگ کانگ کی واپسی کے بعد سے "ایک ملک دو نظام" کے فارمولے پر عمل پیرا ہیں۔

پیر کے روز پیش آنے والے واقعے کی وڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ پولیس اہل کار نے نوجوان کے سینے میں گولی ماری تو ان کے درمیان دو میٹر سے زیادہ کا فاصلہ نہیں تھا۔ اس موقع پر دیگر مظاہرین نے اس جنونی کیفیت کے شکار پولیس اہل کار کو قابو کرنے کی کوشش کی تا کہ مزید افراد اس کی گولی کا نشانہ نہ بن جائیں ... تاہم سیکورٹی فورسز نے مظاہرین کے چہروں پر "مرچوں کا اسپرے" چھڑک کر متعدد افراد کو گرفتار کر لیا۔

اس واقعے کی وڈیو یوٹیوب سمیت سوشل میڈیا پر تیزی کے ساتھ پھیل گئی۔ اس کے نتیجے میں ہانگ کانگ میں عوامی غیض و غضب میں ڈوبا ہوا رد عمل سامنے آ رہا ہے۔ لنچ بریک میں دفاتر کے متعدد ملازمین سڑکوں پر نکل آئے اور انہوں نے "قاتل قاتل.. گینگ" کے نعرے لگائے۔

نیوز ایجنسیوں کی جانب سے یہ سوال اٹھایا جا رہا ہے کہ جب اس 29 سالہ نہتے نوجوان کے پاس "ہتھیار نہیں تھا تو پھر وہ پولیس کے لیے خطرہ کیسے بن گیا؟"

اس حوالے سے احتجاج میں شامل ایک خاتون کا کہنا ہے کہ "مجھے سمجھ نہیں آ رہا کہ پولیس اس وحشیانہ طریقے سے کیوں پیش آ رہی ہے اور بے قصور افراد پر حملہ کر رہی ہے۔ میں سمجھتی ہوں کہ حالات قابو سے باہر ہو چکے ہیں"۔

ہانگ کانگ شہر کی آبادی 75 لاکھ ہے۔ چینی زبان میں "ہانگ کانگ" کا معنی "خوشبو کی بندرگاہ" ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند