تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
سعودی عرب میں اونٹوں کے لیے دُنیا کے سب سے بڑے ہسپتال کا منصوبہ تیار
کیمل ویٹرنری ہسپتال کے قیام پر 10 کروڑ ریال کا تخمینہ
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 2 رجب 1441هـ - 26 فروری 2020م
آخری اشاعت: ہفتہ 20 جمادی الثانی 1441هـ - 15 فروری 2020م KSA 10:05 - GMT 07:05
سعودی عرب میں اونٹوں کے لیے دُنیا کے سب سے بڑے ہسپتال کا منصوبہ تیار
کیمل ویٹرنری ہسپتال کے قیام پر 10 کروڑ ریال کا تخمینہ
الریاض ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

سعودی عرب کی حکومت نے مملکت میں اونٹوں کے علاج کے لیے دنیا کا سب سے بڑا ویٹرنری ہسپتال قائم کرنے کا منصوبہ تیار کیا گیا ہے۔ اس منصوبے پر تقریبا 10 ریال لاگت آئے گی۔

العربیہ ڈاٹ‌ نیٹ کےمطابق سعودی عرب کی وزارت زراعت وماحولیات کی طرف سے القصیم کے علاقے میں نہ صرف مملکت بلکہ پوری دنیا کا سب سے بڑا ویٹرنری ہسپتال قائم کرنے کے لیے پیر ورک مکمل کرلیا گیا ہے۔ جلد ہی اس اسپتال کا افتتاح کردیا جائے گا۔ اس اسپتال کے لیے 'سلام ہسپتال برائے کیمل ویٹرنری' کا نام تجویز دیا گیا ہے۔

اس اسپتال میں‌نہ صرف اونٹوں‌ کو لاحق ہونے والی بیماریوں کا علاج کیا جائےگا بلکہ اونٹوں کی پرورش، نگہداشت اور ان کی افرائش نسل کے لیے دیگر سہولیات بھی فراہم کی جائیں‌ گی۔

سعودی عرب کی سرکاری نیوز ایجنسی'ایس پی اے' کے مطابق سیکرٹری امور حیوانات ڈاکٹر حمد البطشان نے بتایا کہ سلام ویٹرنری گروپ کے زیرانتظام اونٹوں کے لیے ہسپتال کے قیام کے منصوبے پر کام جاری ہے۔ اس ہسپتال کے قیام کے لیے پبلک سیکٹر سے بھی معاونت حاصل کی جائے گی۔ اس کے علاوہ ہسپتال کو اونٹوں کی پرورش اور نگہداشت کی خدمات کا بھی مرکز بنایا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ نئے ویٹرنری ہسپتال کے قیام کے نتیجے میں مملکت میں اونٹوں کی پروش اور ان کی صحت مند تعداد میں اضافے میں مدد ملے گی۔ اسپتال کے قیام کے ساتھ ساتھ سعودی عرب کی حکومت مملکت میں اونٹوں کی پرورش کے لیے مقامی اور غیرملکی سرمایہ کاروں کی حوصلہ افزائی کرے گی۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند