تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
افغان عوام طالبان سے امن معاہدے کو جنگ کے خاتمے لیے غنیمت سمجھیں: ٹرمپ
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 9 ربیع الثانی 1442هـ - 25 نومبر 2020م
آخری اشاعت: ہفتہ 5 رجب 1441هـ - 29 فروری 2020م KSA 07:37 - GMT 04:37
افغان عوام طالبان سے امن معاہدے کو جنگ کے خاتمے لیے غنیمت سمجھیں: ٹرمپ
ڈونلڈ ٹرمپ وائٹ ہائوس میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے ہیں۔
واشنگٹن ۔ ایجنسیاں

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جمعہ کے روز افغان عوام پر زور دیا کہ وہ نئے مستقبل کے موقع سے فائدہ اٹھائیں۔ ان کا کہنا تھا کہ طالبان کے ساتھ معاہدہ افغانستان میں جاری جنگ کے خاتمے کی راہ ہموا کرے گا۔ تمام افغان قوتوں کو اس موقعے کوغنیمت سمجھنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر خارجہ مائیک پومپیو طالبان کے ساتھ امن معاہدے پر دستخط کی تقریب میں شرکت کریں گے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مزید کہا کہ جلد ہی میری ہدایت پر وزیر خارجہ مایئک پومپیو طالبان نمائندوں کے ساتھ معاہدے پر دستخط کرنے کی تقریب میں شرکت کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیر دفاع مارک ایسپر اس حوالے سے افغانستان حکومت کے ساتھ مشترکہ اعلامیہ جاری کریں گے۔

صدر ٹرمپ نے کہا کہ یہ افغانستان کے عوام پر منحصر ہوگا کہ وہ اپنے مستقبل کا تعین کیسے کرتے ہیں۔ لہذا ہم افغان عوام سے گذارش کرتے ہیں کہ وہ امن اور اپنے ملک کے لیے ایک نئے مستقبل کے اس موقع سے فائدہ اٹھائیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ "اگر طالبان اور افغان حکومت اپنی ذمہ داریاں پوری کرتے ہیں تو ہم افغانستان میں جنگ ختم کرنے اور اپنے فوجیوں کو وطن واپس لانے کے لئے آگے بڑھیں گے۔"

طالبان کے ساتھ معاہدے کے بعد افغانستان میں تعینات 12 یا 13 ہزار امریکی فوج کی تعداد کم کرکے 8 ہزار 600 کردی جائے گی۔ اگر طالبان نے معاہدے کا احترام کیا تو امریکی فوج افغان سے مرحلہ وار مکمل طور پر نکل جائے گی۔

خیال رہے کہ امریکی صدر نے یہ بیان ایک ایسے وقت میں دیا ہے جب دوسری طرف طالبان اور امریکا کے درمیان آج 29 فروری کو ایک تاریخی معاہدہ طے پانے جا رہا ہے۔

نقطہ نظر

مزید