تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
مصر: کھلے میدان میں نماز جمعہ پڑھانے والے الازھری خطیب کا لائسنس منسوخ
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 9 شوال 1441هـ - 1 جون 2020م
آخری اشاعت: ہفتہ 3 شعبان 1441هـ - 28 مارچ 2020م KSA 07:48 - GMT 04:48
مصر: کھلے میدان میں نماز جمعہ پڑھانے والے الازھری خطیب کا لائسنس منسوخ
فائل فوٹو۔
قاہرہ ۔ اشرف عبدالحمید

مصرکی وزارت اوقاف نے جامعہ الازھر کے ایک پروفیسر اور خطیب کو کھلے میدان میں جمعہ کا اجتماع منعقد کرتے ہوئے کرونا کی وجہ سے عاید کردہ پابندی کی خلاف ورزی کے الزام میں آئندہ خطابت سے روک دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق وزارت اوقاف نے جامعہ الازھر کے استاد اور عالم دین کو جاری کردہ خطابت کا لائسنس بھی منسوخ کر دیا ہے۔ انہوں نے شمالی قاہرہ کی القلوبیا گورنری میں گذشتہ روز ایک سڑک کے کنارے کھلے مقام پر نماز جمعہ کا اجتماع منعقد کیا تھا حالانکہ حکومت کی طرف سے کرونا وائرس کی وجہ سے جمعہ کے اجتماعات پر پابندی عاید کی گئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مصری وزیر اوقاف ڈاکٹر مختار جمعہ نے قاہرہ میں جامعہ الازہر یونیورسٹی کے استاد ڈاکٹر احمد عبد الرحمٰن محمد کساب عوامی مقامات پر جمعہ کے اجتماعات منعقد کرنے پر پابندی کی خلاف ورزی کے بعد خطابت کے لائسنس سے محروم کر دیا گیا ہے۔

وزارت اوقاف نے بتایا کہ قلوبیہ گورنریٹ میں قلیب سٹی کی ایک سڑک پر ڈاکٹر الکساب نے لوگوں کو جمع کرکے جمعہ کی نماز کا خطبہ دیا۔ انہوں نے کرونا وائرس کی وجہ سے جمعہ کے اجماعات پرعاید کردہ پابندی کی مخالفت کی جس کے بعد الکساب کو آئندہ جمعہ کے خطبہ دینے سے روک دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ کئی دوسرے مسلمان ممالک کی طرح مصر میں بھی علماء نے کرونا کی وباء کو مزید پھیلنے سے روکنے کے لیے مذہبی اجتماعات اور جمعہ کے اجتماعات پر عارضی طورپر پابندی عاید کی ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند