تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2021

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
انڈونیشیا نے ایران اور پاناما کے تیل بردار جہاز ضبط کر لیے!
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

اتوار 23 رجب 1442هـ - 7 مارچ 2021م
آخری اشاعت: اتوار 10 جمادی الثانی 1442هـ - 24 جنوری 2021م KSA 20:27 - GMT 17:27
انڈونیشیا نے ایران اور پاناما کے تیل بردار جہاز ضبط کر لیے!
ایران کے پرچم بردار ایم ٹی ہارس اور پاناما کے پرچم بردار ایم ٹی فریا ٹینکر کو مغربی صوبہ مغربی کلمنتان کے پانیوں میں پکڑا گیا ہے۔
العربیہ ڈاٹ نیٹ

انڈونیشیا میں حکام نے ایران اور پاناما کے ایک ایک تیل بردار جہاز کو ضبط کر لیا ہے۔انھوں نے شُبہ ظاہر کیا ہے کہ ان دونوں آئیل ٹینکروں کے ذریعے غیر قانونی طور پر تیل منتقل کیا جارہا تھا اور انھیں انڈونیشی پانیوں سے گذارہ جارہا تھا۔

انڈونیشیا کی میری ٹائم سکیورٹی ایجنسی کے ترجمان وینسو پرامادتا نے کہا ہے کہ ایران کے پرچم بردار ایم ٹی ہارس اور پاناما کے پرچم بردار ایم ٹی فریا ٹینکر کو مغربی صوبہ مغربی کلمنتان کے پانیوں میں پکڑا گیا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ان ٹینکروں نے مختلف قسم کی خلاف ورزیوں کا ارتکاب کیا ہے۔ان پر ان کے ملکوں کے قومی پرچم لہرا نہیں رہے تھے، انھوں نے اپنے شناختی نظاموں کو بند کررکھا تھا۔ یہ غیر قانونی طور پرایک دوسرے سے باندھے گئے تھے اور ان جہازوں میں ایک سے دوسرے سے غیرقانونی طور پر تیل منتقل کیا جارہا تھا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ حکام ان دونوں ٹینکروں کو صوبہ ریایو آئلینڈز میں واقع باتم جزیرے میں منتقل کررہے تھے اور وہاں ان سے مزید تحقیقات کی جائے گی۔

ایران کے سرکاری ٹیلی ویژن نے بھی انڈونیشی حکام کے حوالے سے اس آئیل ٹینکر کے پکڑے جانے کی تصدیق کی ہے۔

واضح رہے کہ امریکا کی عایدکردہ پابندیوں کے نتیجے میں عالمی مارکیٹ میں ایران کی تیل کی فروخت بُری طرح متاثرہوئی ہے۔اب ایرانی حکام ٹینکروں کے ذریعے اس طرح غیر قانونی طریقے سے تیل بیرون ممالک منتقل کر رہے ہیں اور ان کے ٹینکر اکثر پکڑے جاتے ہیں۔

سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی عاید کردہ پابندیوں کے بعد ایران صرف وینزویلا کو کھلے عام تیل فروخت کررہا ہے۔ایران کے سرکاری تیل بردار جہاز بالعموم اپنے خود مختار شناختی نظام بند کردیتے ہیں تاکہ ان کی شناخت ظاہر نہ ہوسکے۔یہ شناختی نظام جہازوں کے تحفظ کے نقطہ نظر سے اہمیت کے حامل ہیں تاکہ دوسرے جہاز یہ جان سکیں کہ ان کے اردگرد کون سے جہاز سمندر میں محو سفرہیں۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ایرانی آئیل ٹینکروں کے ذریعے تیل دوسرے جہازوں میں منتقل کردیا جاتا ہے اور پھر ان کے ذریعے مختلف ممالک یا کمپنیوں کو فروخت کیا جاتا ہے۔

نقطہ نظر

مزید