تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
قطر ترکی کی کالونی بن چکا ہے: خلیفہ بن مبارک آل ثانی
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

ہفتہ 22 ذوالحجہ 1440هـ - 24 اگست 2019م
آخری اشاعت: جمعرات 22 جمادی الثانی 1440هـ - 28 فروری 2019م KSA 07:40 - GMT 04:40
قطر ترکی کی کالونی بن چکا ہے: خلیفہ بن مبارک آل ثانی
خلیفہ بن مبارک بن خلیفہ آل ثانی
العربیہ ڈاٹ نیٹ

قطر کے حکمران خاندان کے ایک ناراض رہ نما خلیفہ بن مبارک بن خلیفہ آل ثانی نے موجودہ حکمران طبقے کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ ان کا کہناہے کہ قطری حکومت نےملک کو ترکی کے ہاتھ گروی رکھ دیا ہے۔ قطر ترکی کی مکمل کالونی بن چکا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اپنے ایک انٹرویو میں خلیفہ بن مبارک آل خلیفہ نے کہا کہ دوحہ کو حکمران خاندان کے افراد بالخصوص نوجوانوں سے خطرات لاحق ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ حکومت آل ثانی خاندان کے افراد کی نقل وحرکت پر نظر رکھے ہوئے ہے۔ حکومت کو آل ثانی خاندان کے افراد سے خوف ہے۔

ایک سوال کے جواب میں خلیفہ بن مبارک نے کہا کہ قطر نے خلیج دشمنی کا مظاہرہ کرکے ملک کو نقصان پہنچایا۔ انہوں‌نے کہا کہ امیر قطر الشیخ تمیم بن حمد آل ثانی نے خاندان کے افراد کو خاموش کرانے کے لیے کئی اقدامات کئے۔ حکومت کی مخالفت کرنے والوں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دی گئیں اور عوام سے کہا گیا کہ وہ آل ثانی کے ناراض لوگوں کی کوئی بات نہ سنیں۔

الشیخ خلیفہ بن مبارک آل ثانی نے کہا کہ دوحہ کی پالیسیوں پر ان کا اعتراض نیا نہیں۔ دوحہ حکومت کو دوسرے ممالک کے اندورنی امور میں مداخلت کا کوئی حق نہیں پہنچتا۔ قطر نے ایسے لوگوں کو اپنے ہاں پناہ دے رکھی ہے جو دوسرے ملکوں کی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں اور انہیں اشتہاری قرار دیا گیا ہے۔

انہوں‌نے کہا کہ قطری نظام کی کیسی تائید کی جاسکتی ہے۔ وہ خلیجی ممالک میں تفرقہ پیدا کرتے اور دہشت گردی کی حمایت کے ساتھ قطر کو ترک فوج کا اڈہ بنا دیا ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند