تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
دہشت گردوں کی سزائے موت پرعمل درآمد شریعت کے عین مطابق ہے: علماء کونسل
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

ہفتہ 17 ذیعقدہ 1440هـ - 20 جولائی 2019م
آخری اشاعت: بدھ 18 شعبان 1440هـ - 24 اپریل 2019م KSA 07:15 - GMT 04:15
دہشت گردوں کی سزائے موت پرعمل درآمد شریعت کے عین مطابق ہے: علماء کونسل
العربیہ ڈاٹ نیٹ

سعودی عرب کی سپریم علماء کونسل نے 37 دہشت گردوں کی سزائے موت پرعمل درآمد کی حمایت کرتے ہوئے اسےاسلامی شریعت کی رو سےدرست قراردیا ہے۔

خیال رہے کہ منگل کےروز سعودی عرب کی وزارت داخلہ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیاتھا کہ دہشت گردی کے الزامات میں سزائے موت پانےوالے 37 دہشت گردوں کے سرقلم کردیے گئے ہیں۔

سعودی علماء‌کونسل کی طرف سےجاری ایک بیان میں کہا گیا ہےکہ دہشت گردانہ نظریات کی پیروی کرنےوالےانتہا پسندوں کےخلاف مملکت میں فتنہ وفساد پھیلانے، فرقہ واریت کوہوا دینےاور معاشرے کے امن و تاخت وتاراج کرنے کے ٹھوس شواہد کی بنیاد پر مقدمات چلائے گئے اور انہیں جرم ثابت ہونے کے بعد سزائیں سنائی گئی تھیں۔

منگل کو وزارت داخلہ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ سعودی شہریت رکھنے والے 37 ملزمان کےخلاف ملک میں افراتفری پھیلانے، دہشت گردی، انتہاپسندی اور دہشت گردانہ سیل تشکیل دینےسمیت ملک میں امن وامان کوتباہ کرنےکےدیگر جرائم ثابت ہونےبعد ان کی سزائوں پرعمل درآمد کیا گیا ہے۔ دہشت گردوں کو دی گئی سزائوں کی اسلامی شرعی عدالت سے بھی توثیق کرائی گئی جس کے بعد مجرموں کو سزائے موت دی گئی ہے۔ اس کےساتھ ساتھ دو ملزمان عزیز مہدی العمری اور خالد بن عبدالکریم التویجری پر بھی حد نافذکی گئی۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند