تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
یزیدی خواتین کی آبرو ریزی میں معاونت پر ام سیاف کے خلاف مقدمہ چلانے کا مطالبہ
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

جمعہ 8 ربیع الثانی 1441هـ - 6 دسمبر 2019م
آخری اشاعت: جمعرات 19 شعبان 1440هـ - 25 اپریل 2019م KSA 07:08 - GMT 04:08
یزیدی خواتین کی آبرو ریزی میں معاونت پر ام سیاف کے خلاف مقدمہ چلانے کا مطالبہ
امل کلونی
اقوام متحدہ ۔ ایجنسیاں

انسانی حقوق کی مندوبہ امل کلونی نے شدت پسند تنظیم 'داعش' کےمالی معاونت کار ابو سیاف کی اہلیہ ام سیاف کے خلاف عراق کے یزیدی قبیلے کی خواتین کی آبرو ریزی میں معاونت کرنے امریکی خاتون کایلامولر کو یرغمال بنانے کے الزامات میں مقدمات چلانے کا مطالبہ کیا ہے۔

امل کلونی دہشت گردوں کےہاتھوں میں یرغمال رہنے والی خواتین بالخصوص ام سیاف گھر پر محصور رکھی گئی یزیدی خواتین کی وکالت کررہی ہیں۔

ایک بیان میں امل کلونی نے کہا کہ یزیدی فرقے کی خواتین کو ام سیاف کے گھر پر داعشی جنگجو ریپ کا نشانہ بناتے جب کہ امریکی یرغمالی خاتون کایلا مولر کی داعشی خلیفہ ابو بکر الغدادی نے عصمت ریزی کی تھی۔

منگل کو سلامتی کونسل کے ایک اجلاس کے دوران امل کلونی نے کہا کہ ام سیاف نے یزیدی خواتین کو ایک کمرے میں بند رکھا۔ ان پرتشدد پر اکسایا۔ اس کے بعد انہیں عصمت ریزی کے لیے تیار کرنے کی خاطر ان کے چہروں پر میک اپ پائوڈر لگایا جاتا۔

تاہم امل کلونی نے ام سیاف کے مکان کے بارے میں یہ نہیں بتایا کہ وہ کہاں پر واقع تھا۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند