تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
ریاض مخالف مجرمانہ کارروائیاں دہشت گردوں کی نفرت کا مظہر ہیں: رابطہ عالم اسلامی
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 29 جمادی الثانی 1441هـ - 24 فروری 2020م
آخری اشاعت: بدھ 10 رمضان 1440هـ - 15 مئی 2019م KSA 07:48 - GMT 04:48
ریاض مخالف مجرمانہ کارروائیاں دہشت گردوں کی نفرت کا مظہر ہیں: رابطہ عالم اسلامی
جنرل سیکرٹری رابطہ عالم اسلامی الشیخ ڈاکٹر محمد بن عبدالکریم عیسیٰ
دبئی ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

سعودی عرب شہر مکہ المکرمہ میں قائم پین اسلامی تنظیم ’’رابطہ عالم اسلامی‘‘ نے گذشتہ روز سعودی عرب میں تیل کی پائپ لائنوں کو بغیر پائلٹ ڈرون طیاروں سے نشانہ بنانےکی شدید مذمت کی ہے۔

رابطہ عالم اسلامی کے ایک بیان میں کہا گیا ہےکہ تنظیم کے جنرل سیکرٹری الشیخ ڈاکٹر محمد بن عبدالکریم عیسیٰ اور سپریم علماء کونسل نے تیل پائپ لائن‌ پر حالیہ حملوں کو سعودی عرب پر تخریبی حملہ قرار دیتے ہوئے شدید الفاظ میں ان کی مذمت کی۔

بیان میں کہا گیا ہےکہ سعودی عرب میں تیل پائپ لائنوں‌پر ڈرون حملے دراصل دہشت گردی کا ارتکاب کرنے والوں کی نفرت آمیز سوچ کی عکاسی ہیں۔ ان حملوں‌سے دہشت گردی کےخلاف لڑنے کے سعودی عزم کو کمزور نہیں‌ کیا جاسکتا۔ یہ حملے مملکت سے دہشت گردی کی لعنت کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے ریاستی عزم کو مزید پختہ کرنے کا ذریعہ ثابت ہوں‌ گے۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز سعودی عرب کے وزیر توانائی خالد الفالح نے بتایا تھا کہ تیل تنصیبات پر ڈرون حملے دنیا کو تیل کی رسد روکنے کے لیے کیے گئے ہیں مگر سعودی عرب کی تیل کی پیداوار اور برآمدات بلا تعطل جاری ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ان حملوں سے ایک مرتبہ پھر یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ تمام دہشت گرد تنظیموں کا استیصال ضروری ہے۔

برطانوی خبر رساں ایجنسی رائیٹرز نے آرامکو کے ایک عہدے دار کے حوالے سے کہا ہے کہ سعودی عرب یورپ کو تیل کی رسد میں تیس لاکھ بیرل تک اضافے کے لیے پُرعزم ہے۔ مملکت کی تیل تنصیبات پر حملوں کے بعد تیل کی قیمتوں میں معمولی سا اضافہ ہوا ہے۔

سعودی عرب کی اسٹیٹ سیکیورٹی پرزیڈنسی کے ترجمان نے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ منگل کے روز پیڑولیم کمپنی آرامکو کے دو پمپنگ اسٹیشنز کو محدود پیمانے پر نقصان پہنچا ہے۔ اسٹیٹ سیکیورٹی کے ترجمان کے مطابق ’’منگل 9 رمضان المبارک 1440ء کو صبح ساڑھے چھ بجے ریاض کے علاقے میں الدوامی اور عفیف میں واقع آرامکو کمپنی کے دو پمپنگ اسٹیشنز کو نشانہ بنایا گیا۔‘‘

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند