تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
صنعاء : بیلسٹک میزائل داغے جانے سے قبل پھٹ گیا ، ایرانی ماہرین کی ہلاکت
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 21 ذیعقدہ 1440هـ - 24 جولائی 2019م
آخری اشاعت: منگل 14 شوال 1440هـ - 18 جون 2019م KSA 11:30 - GMT 08:30
صنعاء : بیلسٹک میزائل داغے جانے سے قبل پھٹ گیا ، ایرانی ماہرین کی ہلاکت
دبئی – العربیہ ڈاٹ نیٹ

یمن کے دارالحکومت صنعاء کے شمال میں واقع الدیلمی کے فضائی اڈے پر ہونے والے ایک دھماکے کے نتیجے میں متعدد ایرانی عسکری اہل کار مارے گئے۔ دھماکا اُس وقت ہوا جب ایک بیلسٹک میزائل داغے جانے کے دوران پھٹ گیا۔

یمنی ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ واقعے میں متعدد افراد ہلاک ہوئے۔ ان میں بیلسٹک میزائلوں، ڈرون طیاروں اور دھماکا خیز مواد کی تنصیب کے ایرانی ماہرین اور حوثی ملیشیا کے کمانڈر شامل ہیں۔

الدیلمی کا فضائی اڈہ اُن اہم عسکری ٹھکانوں میں سے ہے جہاں میزائل لانچنگ پیڈز اور ڈرون طیاروں کے پلیٹ فارم شامل ہیں۔ ان کے علاوہ مذکورہ میزائلوں اور ڈرون طیاروں کی تیاری اور اسمبلنگ کے ورکشاپس بھی واقع ہیں۔ یہ اڈہ صنعاء کے بین الاقوامی ایئرپورٹ کے نزدیک ہے۔

یمن میں سرگرم عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے صنعاء کے مغرب میں ہتھیاروں کے گوداموں اور تزویراتی اہداف پر بم باری کی۔ اتحادی طیاروں نے الضالع اور حجہ میں بھی حوثی ملیشیا کی میزائل صلاحیتوں کو نشانہ بنایا۔

اس دوران یمنی فوج بھی مذکورہ دونوں صوبوں میں کئی علاقوں پر کنٹرول حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئی جب کہ حوثی ملیشیا نے مغربی ساحل کی جانب عسکری جارحیت کا سلسلہ جاری رکھا۔

حوثی ملیشیا نے الحدیدہ شہر کے جنوبی علاقوں کی سمت عسکری کمک بھیجی۔ اس دوران شہر کے اندر مزید خںدقوں اور سرنگوں کی کھدائی جاری ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند