تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
یمنی حکومت کو سپورٹ کرنے والے اتحاد میں اہم شراکت دار ہیں: امارات
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 23 محرم 1441هـ - 23 ستمبر 2019م
آخری اشاعت: بدھ 19 ذوالحجہ 1440هـ - 21 اگست 2019م KSA 13:01 - GMT 10:01
یمنی حکومت کو سپورٹ کرنے والے اتحاد میں اہم شراکت دار ہیں: امارات
العربیہ ڈاٹ نیٹ

متحدہ عرب امارات نے عدن کی صورت حال کے حوالے سے اپنے خلاف سامنے آنے والے تمام دعوؤں اور پروپیگنڈے پر شدید افسوس کا اظہار کرتے ہوئے انہیں یکسر مسترد کر دیا ہے۔

امارات نے ایک بار پھر اس موقف کو دہرایا ہے کہ وہ یمن میں سرگرم عرب اتحاد میں ثابت قدمی کے ساتھ شریک ہے اور جنوبی یمن کی موجودہ صورت حال کو پرسکون بنانے کے واسطے انتہائی کوششیں جاری رکھنے کے لیے پُرعزم ہے۔

یہ موقف اقوام متحدہ میں امارات کی مستقل مندوبہ کے نائب اور اماراتی مشن کے ناظم الامور سعودی حمد الشامسی کے دیے گئے ایک بیان میں سامنے آیا۔ انہوں نے یہ بیان منگل کے روز سلامتی کونسل میں وزارتی سطح کے ایک خصوصی اجلاس کے دوران دیا۔ اماراتی خبر رساں ایجنسی WAM کے مطابق یہ اجلاس اُن چیلنجوں کے حوالے سے تھا جو مشرق وسطی میں امن و سلامتی کو یقینی بنانے کی راہ میں آڑے آ رہے ہیں۔

الشامسی نے باور کرایا کہ عدن میں یمنی آئینی حکومت اور جنوبی عبوری کونسل کے درمیان مسلح جھڑپوں پر امارات کو گہری تشویش ہوئی۔ امارات یمنی شہریوں کی سلامتی برقرار رکھنے کے لیے حالات کو پرسکون بنانے اور عدم جارحیت پر زور دیتا ہے۔

اماراتی نائب مندوب نے واضح کیا کہ برادر مملکت سعودی عرب کے زیر قیادت اتحاد میں امارات ایک مرکزی شریک کی حیثیت رکھتا ہے اور اس کے بدلے اُسے بڑی قربانیاں دینا پڑیں۔

الشامسی نے اپنے بیان میں کہا کہ یمن میں آئینی حکومت کی سرکاری طور پر درخواست کی بنا پر امارات نے حوثیوں کے حملوں کے خلاف فیصلہ کن اقدامات کیے۔ ان اقدامات کا مقصد یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کیا جا سکے۔

انہوں نے واضح کیا کہ امارات نے عدن اور حوثی باغیوں کی جانب سے قبضے میں لی گئی زیادہ تر اراضی کو آزاد کرانے میں اہم کردار ادا کیا ہے .. امارات نے اپنے طور پر ان حساس اور دشوار مراحل کے دوران دہشت گرد جماعتوں کو اس سیکورٹی خلا سے فائدہ اٹھانے سے روکا۔

الشامسی کے مطابق امارات نے آزاد کرائے گئے یمنی علاقوں میں تعمیر نو کے سلسلے میں کی جانے والی کوششوں میں بھی کردار ادا کیا۔ اس مقصد کے لیے یمنی عوام کے واسطے بھرپور لوجسٹک اور ٹیکنیکل سپورٹ پیش کی گئی۔ اسی طرح امارات نے آبنائے باب مندب اور بحر احمر میں جہاز رانی کی آزادی کے تحفظ کے لیے عرب اتحاد کی کوششوں میں حصہ لیا۔

الشامسی نے ایک بار پھر یمنی فریقوں پر زور دیا کہ وہ سنجیدہ اور ذمے دارانہ بات چیت کو یقینی بنائیں تا کہ اندرونی اختلافات کو ختم کیا جا سکے۔

انہوں نے دوٹوک انداز میں کہا کہ عرب اتحاد میں شراکت دار کی حیثیت سے امارات جنوبی یمن میں جارحیت کم کرنے کے واسطے انتہائی کوششیں کرے گا۔

بیان کے اختتام پر الشامسی نے یمن کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی مارٹن گریفتھس کی کوششوں کے واسطے امارات کی سپورٹ کا ایک بار پھر اعادہ کیا۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند