تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
کیا لبنان میں حزب اللہ کے اتحادی بھی امریکی پابندیوں کے شکنجے میں آنے والے ہیں؟
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 18 محرم 1441هـ - 18 ستمبر 2019م
آخری اشاعت: اتوار 23 ذوالحجہ 1440هـ - 25 اگست 2019م KSA 16:47 - GMT 13:47
کیا لبنان میں حزب اللہ کے اتحادی بھی امریکی پابندیوں کے شکنجے میں آنے والے ہیں؟
دبئی ۔ جیلان الفطایری

لبنان کے سیاسی حلقوں کی طرف سے خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ امریکا جلد ہی ایران نواز حزب اللہ ملیشیا کے اتحادیوں پر بھی پابندیاں عاید کر سکتی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق امریکا کی طرف سے لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کی اتحادی نیشنل فریڈم موومنٹ پر اقتصادی پابندیاں عاید کی جاسکتی ہیں۔

خیال رہے کہ حال ہی میں امریکی وزیرخزانہ کے معاون برائے انسداد دہشت گردی نے لبنانی وزیر خارجہ جبران باسیل پر الزام عاید کیا تھا کہ وہ اپنے عیسائی طرز عمل کو تحفظ دینے کے لیے حزب اللہ کی حمایت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

اخبار 'الشرق الاوسط' کی رپورٹ کے مطابق لبنان کی نیشنل فریڈم پارٹی بھی بلیک لسٹ ہونے والی لبنانی قوتوں میں شامل ہوسکتی ہے۔ فریڈم پارٹی سے تعلق رکھنے والے جبران باسیل اپنے عیسائی مذہب سے تعلق پر پردہ ڈالنے کے لیے حزب اللہ کی حمایت کر رہے ہیں۔

اس ضمن میں لبنانی وزیر محنت یوسف فنیانوس، وزیر مملکت برائے صدارتی امورسلیم جریصاتی اور ڈیموکریٹک پارٹی کے سربراہ طلال ارسلان پر حزب اللہ کے ساتھ تعاون کے عہد و پیمان کرنے پر امریکا کی جانب سے بلیک لسٹ کیے جاسکتے ہیں۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند