تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
'سعودی عرب امن، رواداری اور مکالمے کے کلچر کو فروغ دینے کا خواہاں ہے'
دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف جنگ جاری رہے گی: خالد المنزلاوی
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 23 صفر 1441هـ - 23 اکتوبر 2019م
آخری اشاعت: ہفتہ 14 محرم 1441هـ - 14 ستمبر 2019م KSA 18:10 - GMT 15:10
'سعودی عرب امن، رواداری اور مکالمے کے کلچر کو فروغ دینے کا خواہاں ہے'
دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف جنگ جاری رہے گی: خالد المنزلاوی
العربیہ ڈاٹ نیٹ

سعودی عرب نے ایک بار پھر باور کرایا ہے کہ مملکت تشدد اور دہشت گردی کی مخالف ہونے کے ساتھ ساتھ دنیا بھر میں امن، رواداری اور مکالمے کے کلچر کو فروغ دینے کی خواہاں ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں سعودی عرب کے نائب مستقل مندوب خالد محمد منزلاوی نے ان خیالات کا اظہار نیویارک میں دنیا میں امن کے کلچر کو عام کرنے کے حوالے سے منعقدہ اعلیٰ سطحی فورم سے خطاب سے جمعہ کے روز خطاب میں کیا۔

خطاب کے آغاز میں سعودی عرب کے نائب مندوب نے اس اعلی سطحی اجلاس کے انعقاد کے لیے فورم کے چیئرمین کا شکریہ ادا کیا، جس میں سب کو امن ومحبت اور رواداری کے پیغام کو عام کرنے کے لیے 20 سال پہلے سے جاری پروگرام اپنے خیالات کے اظہار کا موقع فراہم کیا۔

انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی تنازعات کا پرامن حل کے بین الاقوامی اصولوں اور اقوام متحدہ کے چارٹر کے مطابق کیاجانا چاہیے۔ دنیا بھر میں جنگوں اور مسلح تنازعات کے تسلسل کو بات چیت کے اور مکالمے کے ذریعے حل کیا جائے۔ غاصب ملکوں کے زیر تسلط ریاستوں کی خود مختاری کے احترام کا فقدان، ان کے اندرونی معاملات میں مداخلت اور عدم استحکام دنیا میں جنگوں کا موجب بن رہے ہیں۔ دنیا بھر کی اقوام امن اور پرامن بقائے باہمی کے اصول اپنا کر عالمی امن اور رواداری کو فروغ دے سکتے ہیں۔

منزلاوی کا کہنا تھا کہ سعودی عرب نے بین الاقوامی سطح پر اپنی کوششوں کے ذریعہ اقوام متحدہ کے میثاق کے مقاصد اور اصولوں کو آگے بڑھانے کے عزم کوایک بار پھر سچ کر دکھایا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ انصاف، ترقی اور انسانی حقوق عالمی امن کے لیے تین بنیادی ستون کا درجہ رکھتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب دہشت گردی اور تشدد سے مقابلہ کرنے، مختلف مذاہب اور ثقافتوں کے مابین رواداری اور مکالمہ پھیلانے کی اپنی مساعی جاری رکھے گی۔ مملکت نے انتہا پسندی کا مقابلہ کرنے اور انتہا پسندانہ نظریات کی بیخ کنی کے لیے قومی سلامتی اور بیداری کے کئی پروگرامات شروع کیے ہیں۔ سعودی عرب مسلمان ملکوں اور دیگر عالمی برادری کے درمیان جاری تنازعات کے حل کے لیے ثالثی کی مساعی جاری رکھے ہوئے ہے۔ حال ہی میں سعودی عرب نے افریقی ملکوں اریٹریا اور ایتھوپیا کے درمیان برسوں سے جاری کشمکش کو مکالمے اور بامقصد ثالثی کی کوششوں کے ذریعے ختم کرایا۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند