تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
طبیبان ماورائے سرحد نے شام کے شمال مشرق میں امدادی سرگرمیاں معطل کردیں
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

منگل 1 رجب 1441هـ - 25 فروری 2020م
آخری اشاعت: منگل 15 صفر 1441هـ - 15 اکتوبر 2019م KSA 20:49 - GMT 17:49
طبیبان ماورائے سرحد نے شام کے شمال مشرق میں امدادی سرگرمیاں معطل کردیں
شام کے سرحدی قصبے عین عیسیٰ سے ترکی کے فضائی حملے کے بعد دھواں بلند ہورہا ہے۔
العربیہ ڈاٹ نیٹ ، ایجنسیاں

فرانس میں قائم ڈاکٹروں کی بین الاقوامی تنظیم ’طبیبان ماورائے سرحد‘ (ایم ایس ایف) نے شام کے شمال مشرقی علاقے میں ترکی کی فوجی کارروائی اور فضائی حملوں کے پیش نظر اپنی طبی امدادی سرگرمیاں معطل کردی ہیں اور وہاں سے اپنے غیر ملکی عملہ کو واپس بلانے کا ا علان کردیا ہے۔

ایم ایس ایف نے منگل کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ انسانی صورت حال کنٹرول سے باہر ہوتی جارہی ہے اور آیندہ دنوں میں ضروریات میں اضافہ ہوگا،اس کے پیش نظر تنظیم کی بیشتر سرگرمیاں معطل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔‘‘ اس سے ایک روز پہلے ایک اور امدادی گروپ مرسی کور نے بھی اس علاقے میں اپنی امدادی سرگرمیاں معطل کردی تھیں۔

ترکی نے گذشتہ بدھ کو شام کے شمال مشرقی علاقے میں کرد ملیشیا کے خلاف فوجی کارروائی شروع کی تھی۔اس کے ردعمل میں امریکا نے اس پر پابندیاں عاید کردی ہیں لیکن اس نے ان پابندیوں کو نظرانداز کرتے ہوئے منگل کے روز بھی شمالی شام میں کردوں کے خلاف کارروائی جاری رکھی ہے۔

اس دوران میں شامی فوج امریکی فوج اور اس کی اتحادی کرد ملیشیا کے علاقے سے انخلا کے بعد ایک سرحدی شہر میں گذشتہ کئی سال کے بعد پہلی مرتبہ پہنچ گئی ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند