تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
قطر ۔۔۔ یمن میں حل کے آڑے آ رہا ہے : بحرینی وزیر خارجہ
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 22 ربیع الاول 1441هـ - 20 نومبر 2019م
آخری اشاعت: جمعہ 18 صفر 1441هـ - 18 اکتوبر 2019م KSA 12:13 - GMT 09:13
قطر ۔۔۔ یمن میں حل کے آڑے آ رہا ہے : بحرینی وزیر خارجہ
دبئی – العربیہ ڈاٹ نیٹ

بحرین کے وزیر خارجہ شیخ خالد بن احمد آل خليفہ کا کہنا ہے کہ "دوحہ حکومت یمن کے حل کے راہ میں رکاوٹ بن رہی ہے، یہ بات قطر کی جانب سے میڈیا میں سامنے آنے والے مواقف سے ظاہر ہوتی ہے"۔ آل خلیفہ کے مطابق یمنی حکومت اور جنوبی کونسل کے درمیان سمجھوتے کے حوالے سے پیش رفت آگے کی جانب بڑھنے کے لیے بہت اہمیت کی حامل ہے اور یمن میں استحکام کے مستقبل پر اس کے مثبت اثرات ہوں گے۔

عربی اخبار الشرق الاوسط کو دیے گئے بیان میں بحرین کے وزیر خارجہ نے کہا کہ قطر ،،، یمن میں جو کھیل کھیل رہا ہے وہ ہر گز کامیاب نہیں ہو گا کیوں کہ آخرکار یمنی عوام قطر کے کردار اور ایرانی مداخلت پر فتح حاصل کریں گے۔

آل خلیفہ نے باور کرایا کہ قطر نہ صرف یمن میں بلکہ لیبیا، تیونس، عراق اور خلیجی ممالک میں بہت سے امور میں رکاوٹ ڈال رہا ہے۔

بحرین کے وزیر خارجہ کے مطابق ان کے ملک نے ایران سے آنے والا جو اسلحہ اور گولہ بارود ضبط کیا وہ دارالحکومت منامہ کے آدھے حصے کو تباہ کرنے کے لیے کافی تھا۔ انہوں نے کہا کہ اہم بات یہ ہے کہ ایران امن و سلامتی اور اچھے پڑوسی ہونے کا پیغام بھیجے ،،، اگر اس نے ایسا نہ کیا تو تمام تر ذمے داری تہران پر عائد ہو گی۔

آل خلیفہ نے روسی صدر ولادی میر پوتین کے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے دوروں کو نہایت اہم قرار دیا۔ انہوں نے شمالی شام میں ترکی کی عسکری مداخلت کی مذمت کرتے ہوئے انقرہ سے مطالبہ کیا کہ وہ شام کی خود مختاری اور اس کی اراضی کا احترام کرے۔

بحرین کے وزیر خارجہ کے مطابق شام میں جنگ شروع ہونے کے بعد ان تمام سالوں میں دمشق میں بحرین کا سفارت خانہ کھلا رہا مگر وہاں سفارت کار نہیں تھے ، صرف مقامی اہل کار موجود رہے تاہم اب منامہ نے اپنا ایک ناظم الامور دمشق بھیجا ہے

ٹیگز

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند