تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
سعودی آرٹسٹ نے اپنے گھرکے درو دیوار کو مصوری سے سجا دیا
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

اتوار 19 ربیع الاول 1441هـ - 17 نومبر 2019م
آخری اشاعت: پیر 21 صفر 1441هـ - 21 اکتوبر 2019م KSA 15:16 - GMT 12:16
سعودی آرٹسٹ نے اپنے گھرکے درو دیوار کو مصوری سے سجا دیا
العربیہ ڈاٹ نیٹ ۔ نادیہ الفواز

سعودی عرب کے ایک نوجوان آرٹسٹ کو ڈرائنگ اور پینٹنگ کا شوق چرایا تو اس نے اپنا یہ شوق کسی اور جگہ پر پورا کرنے کےبجائے اپنے گھر کے درو دیوار پر پورا کرکے ایک منفرد مثال قائم کی ہے۔

نوجوان آرٹسٹ عبداللہ العیسٰی نے اپنے فن کو جلا بخشنے اور خود کو ایک پیشہ ور فن کار بنانے کے لیے گھر کی دیواروں پر خاکے بنانا شروع کیے۔ اسے گھر کی دیواروں پر اپنے ہنرکوآزمانے اور اس میں طاق ہونےکے لیے وسیع جگہ اور محفوظ محفوظ مل جاتا تھا۔ یہی وجہ ہے کہ اس نے اپنے گھر کے درو دیوار پر دسیوں معروف شخصیات کے خاکےاور تصاویر بنا رکھی ہیں۔

عیسیٰ کے گھر کی دیواروں کو دیکھنے سےنہیں لگتا کہ وہ کوئی معمولی آرٹسٹ ہے۔ دیواروں پر آرٹ کے نمونے بنانے والا عبداللہ عیسیٰ کو ملک گیر شہرت حاصل ہوچکی ہے۔

جامعہ تبوک سے تعلیم سے فراغت کے ساتھ ''امسکت بید السین' عنوان سے ایک کتاب تالیف کی۔ اب وہ ایک مشہور نقاش اور کارٹونسٹ بن چکے ہیں جو ڈرائنگ کے ذریعے مشاہیر کی تصاویر اتارنے میں ید طولیٰ رکھتے ہیں۔

عبداللہ عیسیٰ نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ اس نے اپنے گھر کے اندرونی حصوں اور دیواروں پر 50 مشہورعرب اور عالمی شخصیات کی تصاویر بنا رکھی ہیں۔ اس کا کہنا ہے کہ میں اپنے فن پاروں کو اپنے بلاگ میں محفوظ کرلیتا ہوں۔

ایک سوال کے جواب میں عبداللہ عیسٰی نے کہا کہ میں نے پانچ سال قبل میں نے خاکہ سازی کا اپنا شوق شروع کیا۔ پہلے سال میں نے 100 فن پارے بنائے جن میں سے صرف پانچ کامیاب ہوئے۔ مگر میں نے دیواروں پر خاکہ سازی کی ہنرآزمائی کا سفر جاری رکھا۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ آپ اپنے ہم مشرب پیشہ ور فن کاروں کو کیا پیغام دینا چاہئیں گے تو ان کا کہنا تھا کہ اس میدان میں قدم رکھنے والے ہر آرٹسٹ سے کہوں گا کہ وہ شوق اور لگن کے ساتھ اپنا مشن جاری رکھیں اور ناکامی سے خائف نہ ہوں۔

عیسیٰ کے پرستاروں کو معلوم ہوا ہے کہ عیسیٰ نے اپنے گھر کی چھتوں کو اوپن ایئر اسٹوڈیو میں تبدیل کردیا ہے۔ وہ کھلے ماحول میں پینٹنگ کو بہت پسند کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہر فنکار کو میرا پیغام دیا جائے کہ جب ان کی کوئی ڈرائنگ ناکام ہوجاتی ہے تو وہ ہچکچاہٹ یا الجھن کا شکارنہ ہوں۔ یہ غلطیاں تجربے اور علم پرمشتمل ہوتی ہیں۔آرٹ اور مصوری کے شوق کی مشق میں تیزی کے ساتھ اور مسلسل ترقی کرتی ہے۔ کوئی فنکار مکمل نہیں ہوتا ہے لیکن ایک فنکار خوفزدہ نہیں ہوتا ہے اور تمام اسلوب استعمال کرتا جاتا ہے۔

عیسیٰ نے اپنے فن کے فروغ کے لیے تبوگ سیزن میں اپنے فن پاروں کی نمائش کی۔ اس نمائش میں انہیں غیرمعمولی پذیرائی حاصل ہوئی۔

 

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند