تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
'نیوم سٹی' میں سعودی خواتین سیاحوں کے پہلے وفد کی آمد
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

جمعہ 17 ربیع الاول 1441هـ - 15 نومبر 2019م
آخری اشاعت: پیر 21 صفر 1441هـ - 21 اکتوبر 2019م KSA 09:20 - GMT 06:20
'نیوم سٹی' میں سعودی خواتین سیاحوں کے پہلے وفد کی آمد
خواتین سیاحوں نے گائیڈ کی مدد سے نیوم شہر کا دورہ کیا
الریاض ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

سعودی عرب کے جدید ترین سیاحتی اور تجارتی شہر'نیوم' کی سیر وسیاحت کے لیے اندرون اور بیرون ملک سے سیاحوں کی آمد کا سلسلہ جاری ہے۔ مملکت کے اندر سے خواتین سیاحوں کےایک وفد نے پہلی بار اس شہر کا دورہ کیا ہے۔ اس وفد میں 20 سعودی خواتین شامل تھیں۔

تبوک سے شروع ہونے والا یہ سفر 19 گھنٹے پر محیط رہا۔ خواتین نے البدع گورنری سے گذرتے ہوئے وادی شعیب کی غاروں، مقنا مرکز، ہیڈ کواٹرز، تاریخی مقام عین موسیٰ، الطیب اسم اور واپسی پر راس الشیخ سے ہوتے ہوئے تبوک تک کا سفر کیا۔

ٹور گائیڈ ھبہ العایدی نے سعودی پریس ایجنسی 'ایس پی اے' کو بتایا کہ تبوک سے نیوم میں پہنچنے والا خواتین کا پہلا وفد ہے۔ خواتین سیاحوں کو دو گائیڈز کی سہولیات فراہم کی گئی تھیں جنہوں نے ان کے اس ٹور کو کامیاب بنانے اور سیر وتفریح میں ان کی مدد کی۔

ان کا کہنا تھا کہ جدید سہولیات سے آراستہ سیاحتی ٹورز کا مقصد نیوم کے علاقے میں سیاحت کو فروغ دینا ہے۔ نیوم سٹی خلیج عقبہ کے علاقے میں تین ممالک کا مشترکہ سیاحتی اور تجارتی پروجیکٹ ہے جو اس خطے میں مستقبل کی سب سے بڑا سیاحتی مرکز بن سکتا ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند