تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
الحشد نجف میں ایرانی قونصل کو آگ لگانے والوں کو اکھاڑ پھینکے: نمائندہ خامنہ ای
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

جمعرات 3 رجب 1441هـ - 27 فروری 2020م
آخری اشاعت: ہفتہ 2 ربیع الثانی 1441هـ - 30 نومبر 2019م KSA 14:18 - GMT 11:18
الحشد نجف میں ایرانی قونصل کو آگ لگانے والوں کو اکھاڑ پھینکے: نمائندہ خامنہ ای
دبئی ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

ایرانی سپریم لیڈر علی خامنہ ای کے نمائندے حسین شریعتمداری نے عراقی مظاہرین کے خلاف براہ راست اشتعال انگیزی پر اکساتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ نجف میں بدھ کے روز ایرانی قونصل خانے کے ایک حصے کو آگ لگانے والے مظاہرین کا تعاقب کیا جائے۔

ایران میں اپوزیشن کی ویب سائٹوں نے ہفتے کے روز بتایا ہے کہ شریعتمداری نے روزنامہ کیہان میں اپنے مضمون میں لکھا ہے کہ ایرانی قونصل خانے میں آگ لگانے کا مقصد خطے میں مزاحمتی محور کو کمزور کرنا ہے۔

خامنہ ای کے نمائندے نے نجف شہر میں ایرانی مداخلتوں کے خلاف غم و غصے کا اظہار کرنے والے اور قونصل خانے پر دھاوا بولنے والے عراقی مظاہرین کو "کرائے کے اوباش" قرار دیا۔ شریعتمداری نے عراقی ملیشیا الحشد الشعبی سے مطالبہ کیا کہ وہ مذکورہ عناصر کی بیخ کنی کر دیں۔ واضح رہے کہ الحشد میں شامل بعض شیعہ گروپ ایران کے لیے اپنی شدید وفاداری کے سبب جانے جاتے ہیں۔

یاد رہے کہ نجف میں عراقی مظاہرین کے ہاتھوں ایرانی قونصل خانے کو آگ لگائے جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے نجف کے گورنر لوئی الیاسری کا کہنا تھا کہ لوگوں کے جتھے مختلف سمتوں سے نکل آئے اور انہوں نے سیکورٹی فورسز پر حملہ کر دیا۔ جمعرات کے روز العربیہ اور الحدث نیوز چینلوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ اس دوران 47 سیکورٹی اہل کار زخمی ہو گئے۔

اس سے قبل بدھ کی شب مظاہرین نے نجف میں ایرانی قونصل خانے کو آگ لگا دی تھی۔ مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ ان کے ملک میں ایرانی نفوذ کو ختم کیا جائے۔ واقعے کے بعد حکام نے شہر میں کرفیو نافذ کرتے ہوئے نجف کے تمام داخلی اور خارجی راستوں کی ناکہ بندی کر دی۔

آگ لگائے جانے کے واقعے کے دوران قونصل خانے میں کام کرنے والے ایرانی ملازمین پیچھے کے دروازے سے فرار ہو گئے۔

ایرانی قونصل خانے کے جلائے جانے سے تقریبا ایک ماہ قبل عراقی مظاہرین نے کربلا میں ایرانی قونصل خانے کی بیرونی دیوار میں آگ لگا دی تھی۔ اس موقع پر عراق میں ایرانی وجود کو مسترد کرنے کی علامت کے طور پر ایرانی سفارتی مشن کی عمارت پر عراقی پرچم لہرا دیا گیا۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند