تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
حزب اللہ کی مالی مدد کرنے والے ہر شخص کو بلیک لسٹ کریں گے: امریکی عہدیدار
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

بدھ 14 شعبان 1441هـ - 8 اپریل 2020م
آخری اشاعت: ہفتہ 16 ربیع الثانی 1441هـ - 14 دسمبر 2019م KSA 07:53 - GMT 04:53
حزب اللہ کی مالی مدد کرنے والے ہر شخص کو بلیک لسٹ کریں گے: امریکی عہدیدار
دبئی ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

امریکی وزیرخزانہ کے معاون خصوصی برائے مشرق بعید ڈیوڈ شینکر نے کہا ہے کہ حزب اللہ ملیشیا کی مالی مدد کرنے والے ہر شخص کو بلیک لسٹ کیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ حزب اللہ ایک دہشت گرد گروپ ہے جو بیرون ملک سے مالی مدد اور منی لانڈرنگ پر انحصار کرتا ہے۔

العربیہ چینل سے بات کرتے ہوئے مسٹر شینکر کا کہنا تھا کہ حزب اللہ ایک دہشت گرد تنظیم ہے جس نے لبنان کی اقتصادی مشکلات میں اضافہ کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مختلف مذاہب کے لوگ حزب اللہ کی مالی مدد میں ملوث ہیں۔ امریکا کی واضح پالیسی ہے۔ حزب اللہ کی جو شخص بھی مدد کرے گا اس پرپابندیاں عاید کی جائیں گی۔

ادھر امریکی وزیر خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ ہم اس موقعے کو ایران کو دہانی کے کا بہتر موقع سمجھتے ہیں اور اسے یا دلاتے ہیں کہ ایران یا اس کے کسی وفادار ایجنٹ نے امریکا یا اس کے اتحادیوں میں سے کسی کے مفادات کو نقصان پہنچایا تو تہران کے خلاف فیصلہ کن کارروائی کی جائے گی۔

ایک دوسرے بیان میں مائیک پومپیو نے لبنان میں کرپشن اور دہشت گردی کے خلاف عوامی احتجاجی مظاہروں کی حمایت کی اور کہا کہ لبنانی حزب اللہ ملیشیا کے خلاف پابندیوں کے ساتھ دیگر تمام ممکنہ طریقے بروئے کار لائے جائیں گے۔

مسٹر پومپیو کا کہنا تھا کہ امریکا نے حزب اللہ کو فنڈنگ فراہم کرنے میں ملوث دو افراد پر پابندیاں عاید کی ہیں۔ یہ سلسلہ آگے بھی جاری رہے گا۔

خیال رہے کہ جمعہ کے روز امریکی وزارت خزانہ نے لبنانی حزب اللہ ملیشیا کو فنڈ فراہم کرنے کے الزام میں دو لبنانی شخصیات پر پابندیاں عاید کی ہیں۔

امریکی محکمہ خزانہ کے مطابق حزب اللہ کی پابندیوں کی فہرست میں آنے والوں میں صالح عاصی اور ناظم سعید احمد کا نام شامل ہے اور یہ دونوں حزب اللہ کی مالی مدد کے لیے منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کے منصوبوں پر کام کرتے رہے ہیں۔ ناظم سعید احمد ہیروں کا تاجر ہے اور اسے حزب اللہ کا ایک بڑا مالی معاونت کار سمجھا جاتا ہے۔

جمعرات کے روز العربیہ اور الحدث چینلوں کو ذرائع سے یہ اطلاع ملی تھی کہ امریکی وزارت خزانہ دو لبنانی شخصیات پر دہشت گردی کے لیے فنڈنگ اور دیگر الزامات میں پابندیاں عاید کرنے کی تیاری کررہی ہے۔

خیال رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے حزب اللہ کے خلاف فیصلہ کن پابندیاں عاید کرنے اور تنظیم کے مالی معاونت کاروں کو نکیل ڈالنے کی پالیسی پرعمل پیرا ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند