تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
ویژن 2030ء کے مطابق 'جنادریہ' ثقافتی میلے کے انعقاد کی تیاری شروع
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

منگل 1 رجب 1441هـ - 25 فروری 2020م
آخری اشاعت: جمعہ 21 جمادی الاول 1441هـ - 17 جنوری 2020م KSA 08:18 - GMT 05:18
ویژن 2030ء کے مطابق 'جنادریہ' ثقافتی میلے کے انعقاد کی تیاری شروع
العربیہ ڈاٹ نیٹ ۔ الریاض

سعودی عرب کی ثقافت کے اظہار اور اس کی نمائندگی کرنے والے سب سے بڑے قومی ثقافتی میلے'الجنادریہ' کو ایک سال کے تعطل کے بعد وزارت ثقافت کے زیراہتمام معقد کرنے کی تیاری شروع کردی گئی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق 'الجنادریہ' میلہ نومبر 2020ء کو منعقد کیا جائے گا۔ سنہ 1985ء سے ہرسال ہونے والے الجنادریہ میلے کے انتظامات وزارت برائے نیشنل گارڈز کی ذمہ داری رہی ہے مگر گذشتہ برس سعودی کابینہ نے الجنادریہ میلے کو مملکت کی وزارت ثقافت کے زیرانتظام کرانے کا فیصلہ کیا تھا۔

سعودی عرب کے نوجوان وزیر ثقافت شہزادہ بدر بن فرحان آل سعود کی زیرقیادت وزارت ثقافت اس بار الجنادریہ میلے کوویژن 2030ء کے اہداف کی روشنی میں منعقد کررہی ہے۔ اس بار ماضی کی نسبت اس میلے کو زیادہ منفرد، متنوع اور زیادہ پرکشش بنانے کے لیے اقدامات کیے جائیں گے تاکہ نہ صرف اندرون ملک بلکہ بیرون ملک سے بھی زائرین اس میں شرکت کرسکیں۔

خیال رہےکہ الجنادریہ میلہ سعودی عرب میں ایک قومی ایونٹ کا درجہ رکھتا ہے جس کے انعقاد کا ملک کے ہرچھوٹے بڑے اور مردو زن کو بے تابی سے انتظار رہتا ہے۔ گذشتہ برس کابینہ کےفیصلے کے بعد یہ میلہ انتظامی معاملات کی وجہ سے منعقد نہیں کیا سکا مگر اس بار اسے پوری قومی جوش وجذبے کے ساتھ منعقد کیا جائے گا۔

ماضی میں منعقد ہونے والے الجنادریہ میلے میں سعودی عرب کی اعلیٰ قیادت، وزراء، سینیر عہدیدار، عامۃ الناس، کے علاوہ دنیا بھر سے مفکرین، دانشور، فنکار اور اعلیٰ شخصیات اس میلے میں شرکت کرکے اس کی رونق بڑھاتی رہی ہیں۔ سعودی عرب نے اس اہم قومی ایونٹ کو ویژن 2030ء کی روشنی میں منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو ماضی کے میلوں سے مختلف اور منفرد ہوگا۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند