تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
امیر قطر کے بھائی پر اپنے حریف کی گرل فرینڈ پر حملے میں ملوث ہونے کا الزام
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

اتوار 14 ذیعقدہ 1441هـ - 5 جولائی 2020م
آخری اشاعت: اتوار 28 جمادی الثانی 1441هـ - 23 فروری 2020م KSA 12:08 - GMT 09:08
امیر قطر کے بھائی پر اپنے حریف کی گرل فرینڈ پر حملے میں ملوث ہونے کا الزام
دبئی – العربیہ ڈاٹ نیٹ

قطر کے امیر تمیم بن حمد کے بھائی خالد بن حمد بن خلیفہ آل ثانی کے ذاتی طبی معاون میتھیو ایلنڈ نے خالد پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ میتھیو کی گرل فرینڈ پر جنسی حملے اور اسے وحشیانہ مار پیٹ کا نشانہ بنانے پر اکسانے میں ملوث ہے۔ مذکورہ 42 سالہ گرل فرینڈ ایبی ہان پر امریکا کے شہر لاس اینجلس میں میتھیو کے گھر میں موجودگی کے دوران حملہ کیا گیا۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل کے مطابق میتھیو نے خالد بن حمد پر مقدمہ دائر کرتے ہوئے 3.4 کروڑ ڈالر کا ہرجانہ طلب کیا ہے۔ میتھیو نے الزام عائد کیا ہے کہ قطر کے امیر کے بھائی نے اسے اپنے محل میں یرغمال بنا کر رکھا اور اسے مسلسل کام کرنے پر مجبور کیا گیا تا کہ خالد بن حمد منشیات کے استعمال سے متاثر ہونے کے بعد روبہ صحت ہو سکے۔

میتھیو کے مطابق گذشتہ ماہ وہ لاس اینجلس میں اپنے گھر واپس لوٹا تو اس نے گھر میں اپنی گرل فرینڈ ایبی ہان کو بہت بری حالت میں پایا۔ ایبی اپنی زندگی کی آخری سانسیں لینے کے قریب تھی۔ اسے پراسرار طور پر وحشیانہ مار پیٹ اور جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ گھر کے ہر کونے میں خون بکھرا ہوا تھا۔ میتھیو نے اس شک کا اظہار کیا کہ یہ کارروائی خالد بن حمد کو عدالت میں لانے کے جواب میں انتقاما کی گئی۔

میتھیو نے مزید بتایا کہ اس کی گرل فرینڈ کو ہسپتال میں انتہائی نگہداشت کے یونٹ میں رکھا گیا۔ وہ دو روز تک بے ہوش رہی۔ دو ہفتے کے علاج کے بعد ایبی گھر منتقل ہو گئی۔ سر میں شدید چوٹوں کے سبب اسے دماغی کمزوری اور جسمانی نقاہت کا سامنا تھا۔ تحقیقات کے مطابق ایبی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بھی بنایا گیا۔ ایبی کو اب ٹھیک طرح یاد بھی نہیں کہ 14 جنوری کو حملے میں اس کے ساتھ کیا ہوا تھا۔

میتھیو اور اس کی گرل فرینڈ ایبی ہان لاس اینجلس میں Pasadena کے علاقے میں ایک اعلی درجے کے رہائشی کمپاؤنڈ میں رہتے ہیں۔ ان کے اپارٹمنٹ میں داخل ہونے کے لیے کوڈز یا پھر Key Cards درکار ہوتا ہے۔ پولیس کے مطابق یہ نہایت نادر نوعیت کا حملہ ہے۔

دوسری جانب شیخ خالد بن حمد کےخلاف مقدمے میں میتھیو ایلنڈ اور اس کے ایک دوست کی پیروی کرنے والی خاتون وکیل ریبیکا کیسٹانیڈا کا کہنا ہے کہ فیڈرل انویسٹی گیشن بیورو FBI کو ایبی ہان پر حملے کے بارے میں آگاہ کر دیا گیا ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند