تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2020

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
'کرونا' کی آڑ میں حوثیوں نے اقوام متحدہ کے امن مشن کے سربراہ کو یرغمال بنا لیا
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 9 شوال 1441هـ - 1 جون 2020م
آخری اشاعت: ہفتہ 3 شعبان 1441هـ - 28 مارچ 2020م KSA 07:41 - GMT 04:41
'کرونا' کی آڑ میں حوثیوں نے اقوام متحدہ کے امن مشن کے سربراہ کو یرغمال بنا لیا
العربیہ ڈاٹ نیٹ ۔ اوسان سالم

یمن میں الحدیدہ کے علاقے میں جنگ بندی اور قیام امن کے لیے اقوام متحدہ کی طرف سے مقرر کردہ امن مشن کے سربراہ اور سابق بھارتی جنرل ابھیجیت کو کرونا کے شبے میں یرغمال بنا لیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے امن مشن کے سربراہ کو حوثیوں نے صنعاء میں ایک ہوٹل سے یرغمال بنایا اور اس کے بعد انہیں سخت ترین سیکیورٹی میں رکھا گیا ہے۔

مغربی ساحلی علاقے پر مشترکہ فوج کے ترجمان کرنل وضاح الدبیش نے جمعہ کے روز کہا ہے کہ حوثی ملیشیا نے جنرل ابھیجیت اور ان کے ساتھ آنے والی ٹیم کو صنعا کے ایک ہوٹل میں حراست میں لیا۔ وہ الحدیدہ جانے کی تیاری کر رہے تھے مگر حوثی ملیشیا نے انہیں کرونا کے شبے میں یرغمال بنا لیا۔ امن مشن کے سربراہ ایک روز قبل سلطنت عمان سے صنعاء لوٹے تھے۔

الدبیش نے امن مشن کے رہ نما کی حوثیوں کے ہاتھوں نظر بندی اور یمن چھوڑنے یا الحدیدہ جانے سے روکنے کی مذمت کی اور اسے حوثیوں کی جانب سے خطرناک پیش رفت اور امن مساعی کے لیے صریح اور واضح چیلنج قرار دیا۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ کرونا وائرس کے بہانے اقوام متحدہ کے امن مشن کے سربراہ کو نظر بند رکھنا اور ان کی اس کی ٹیم کو سخت سیکیورٹی میں رکھنا بین الاقوامی معاہدوں اور عالمی قوانین کی صریح خلاف ورزی ہے۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند