ٹھٹھہ کے ساحلی علاقے بوھارا کے قریب سمندر میں زائرین کی کشتی ڈوبنے سے 13 افراد جاں بحق ہوگئے جبکہ 20 افراد کو ریسکیو کرلیا گیا۔کشتی میں خواتین اوربچوں سمیت 60سے زائدزائرین سوارتھے۔ڈی سی ٹھٹھہ نے13 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کر دی۔

ڈی سی ٹھٹھہ نےوزیراعلیٰ سندھ کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ 13 لاشیں نکالی گئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ دو کشتیوں میں سوار 60 سے زائد افراد پیرپٹھو کے مزارپرجارہے تھے،تیزہوا کےباعث کشتیاں آپس میں ٹکرائیں۔

وزیراعلیٰ سندھ نے کمشنرحیدرآباد کو ریسکیو کا کام تیزکرنے کی ہدایت کر دی۔

پولیس کے مطابق دو خواتین، دو بچوں اور ایک شخص کی لاش شیخ زاید اسپتال ساکرو منتقل کردی گئی۔

پولیس کے مطابق زائرین درگاہ کے میلےمیں شرکت کے لیے جا رہے تھے کہ بوھارا کے قریب سمندر میں کشتی الٹ گئی۔

ادھر پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری ٹھٹھہ کے قریب کشتی الٹنے کے واقعے پر اظہار افسوس کیا ہے، انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت اور انتظامیہ ریسکیو اورریلیف آپریشن تیزکریں۔