تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
فوج کا احتسابی نظام ’’ان ایکشن‘‘:جاسوس لیفٹیننٹ جنرل کو قید، بریگیڈئر کو سزائے موت
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

ہفتہ 19 صفر 1441هـ - 19 اکتوبر 2019م
آخری اشاعت: جمعرات 25 رمضان 1440هـ - 30 مئی 2019م KSA 17:08 - GMT 14:08
فوج کا احتسابی نظام ’’ان ایکشن‘‘:جاسوس لیفٹیننٹ جنرل کو قید، بریگیڈئر کو سزائے موت
جنرل قمر جاوید باجوہ

پاکستان کی مسلح فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے دو فوجی اور ایک سول افسر کو جاسوسی کی پاداش میں فیلڈ جنرل کورٹ مارشل عدالت کی جانب سے دی والی سزاؤں کی منظوری دے دی۔

سزا پانے والوں میں ریٹائرڈلفیٹینٹ جنرل جاوید اقبال شامل ہیں۔ انہیں آفیشل ایکٹ کے تحت 14 سال سزا بامشقت دی گئی ہے۔ ریٹائرڈ بریگیڈیٹر راجا رضوان کو سزائے موت دی گئی اور حساس ادارے کے سویلین افسر ڈاکٹر وسیم اکرم کو سزائے موت دی گئی۔

View this post on Instagram

Chief of Army Staff General Qamar Javed Bajwa has endorsed punishment to two senior retired Army officers and one civil officer "on the charges of espionage/ leakage of sensitive information to foreign agencies prejudice to the national security", said a statement by the Inter-Services Public Relations. ⠀⠀⠀⠀⠀⠀ "The officers were tried under #Pakistan Army Act (PAA) and Official Secret Act by separate Field General Court Marshal (FGCM) for separate cases," said the statement issued by the military's media wing. ⠀⠀⠀⠀⠀⠀ ISPR also released a video statement of Major General Asif Ghafoor confirming the arrest of the two officers and their court-marital. ⠀⠀⠀⠀⠀⠀ #DawnToday

A post shared by Dawn Today (@dawn.today) on

یاد رہے افسران کے خلاف کارروائی بیرونی ایجنسیوں کے لیے جاسوسی کے شبہے میں شروع کی گئی تھی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق مشتبہ سول اور فوجی حکام کے خلاف پاکستان آرمی ایکٹ کے تحت الگ الگ فیلڈ جنرل کورٹ مارشل میں مقدمات چلائے گئے۔

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ’’آئی ایس پی آر ‘‘کا کہنا ہے گذشتہ دو سال میں مختلف عہدوں پر کام کرنے والے 400 سو افسران کو سزائیں دی گئی۔


 

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند