تمام حقوق بحق العربیہ نیوز چینل محفوظ ہیں © 2019

دوست کو بھیجئے

بند کیجئے
قریباً دو لاکھ پاکستانی عازمین کی حج کے لیے مکہ مکرمہ میں آمد
ایک لاکھ 22 ہزار 975 سرکاری اور 76 ہزار 755 عازمینِ حج نجی حج اسکیم کے تحت سعودی عرب آئے ہیں
دوست کا نام:
دوست کا ای میل:
بھیجنے والے کا نام:
بھیجنے والے کا ای میل:
Captchaکوڈ

 

پیر 23 محرم 1441هـ - 23 ستمبر 2019م
آخری اشاعت: جمعرات 6 ذوالحجہ 1440هـ - 8 اگست 2019م KSA 18:58 - GMT 15:58
قریباً دو لاکھ پاکستانی عازمین کی حج کے لیے مکہ مکرمہ میں آمد
ایک لاکھ 22 ہزار 975 سرکاری اور 76 ہزار 755 عازمینِ حج نجی حج اسکیم کے تحت سعودی عرب آئے ہیں
مکہ مکرمہ ۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ

پاکستان سے قریباً دو لاکھ عازمینِ حج مکہ مکرمہ پہنچ گئے ہیں اور وہ جمعرات کی شب سے مناسکِ حج کے آغاز کے لیے منیٰ روانہ ہورہے ہیں۔

پاکستان کی وزارت حج اور بین المذاہب ہم آہنگی کے ترجمان کے مطابق ایک لاکھ 22 ہزار 975 سرکاری اور 76 ہزار 755 عازمینِ حج نجی حج اسکیم کے تحت سعودی عرب آئے ہیں۔سرکاری اسکیم کے تحت حج پروازوں کا آپریشن گذشتہ روز مکمل ہوگیا تھا جبکہ نجی اسکیم کے تحت بعض پروازوں کی جمعرات کو بھی آمد ہورہی ہے۔

مکہ مکرمہ میں پاکستان کے حج مشن نے موسسہ جنوب ایشیا اور مکاتب کے ساتھ تعاون کے ذریعے عازمین حج کے مناسک کی ادائی اور مشاعر مقدسہ تک پہنچانے کے لیےانتظامات مکمل کر لیے ہیں۔

مکاتب کی جانب سے مِنی کی خیمہ بستی میں قیام کے لیے کارڈ عازمین حج کو ان کی رہائش گاہوں پر تقسیم کردیے گئے ہیں اور مکہ مکرمہ کے علاقے العزیزیہ اور دوسرے علاقوں میں واقع پاکستانی حجاج کی اقامتی عمارتوں میں منیٰ میں خیموں اور شاہراہوں کے نقشے بھی فراہم کردیے گئے ہیں تاکہ حجاج کو کسی قسم کی دشواری کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

حج مشن نے سرکاری اسکیم کے تحت رقوم جمع کرانے والے حجاج کرام کی قربانیوں کے سعودی عرب میں اسلامی ترقیاتی بینک کے ذریعے انتظامات مکمل کرلیے ہیں۔عازمین کو ان کی اقامت گاہوں سے بسوں اورٹرین کے ذریعے منیٰ لے جایا جائے گا۔البتہ ٹرین اسٹیشنوں سے دور واقع مکاتب کے عازمین حج کی عرفات روانگی اور واپسی بسوں کے ذریعے ہو گی۔

پاکستان کی وزارت مذہبی امور کا مکہ مکرمہ میں واقع دفترامورحج اپنے مقررکردہ معاونین کے ذریعے مشاعر میں حجاج کرام کی مدد و رہنمائی کرے گا۔امسال اس دفتر نےعازمین حج کو مزید بہتر سہولتیں اور تین وقت کا کھانا مہیا کرنے کے لیے مکاتب کے ساتھ ایک سمجھوتا طے کیا ہے۔اس کے تحت حجاج کرام کو منیٰ اور مزدلفہ میں ان کے خیموں میں کھانا مہیا کیا جائے گا۔

نقطہ نظر

مزید

قارئین کی پسند