.

عراقی خاتون پارلیمنڑین کی مرد رکن اسمبلی پر ایوان میں جوتا باری

مرد رکن پارلیمنٹ کی مبینہ زبان درازی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی پارلیمنٹ میں قومی بجٹ کی منظوری کے موقع پرعراقی نیشنل موومنٹ سے وابستہ خاتون پارلیمنٹرین عالیہ نسیاف نے العراقیہ لسٹ پارلیمانی بلاک کے قانون ساز سلیمان الجمیلی کو جوتا دے مارا۔

منتخب ایوان میں ہونے والی پارلیمانی لڑائی کا میدان اس وقت گرم ہوا جب عراقیہ لسٹ کے سلیمان الجمیلی نے ساتھی خاتون پارلیمنٹرین کو خبردار کیا کہ وہ مجوزہ بجٹ کے حق میں ووٹ کا حق استعمال نہ کریں۔

پارلیمنٹ سے جمعرات کو منظور ہونے والے بجٹ کی العراقیہ لسٹ اور ایوان میں کرد جماعتوں نے مخالفت کی تھی۔ کئی ہفتوں کی تاخِیر کے بعد 119.1 ارب ڈالرز کا بجٹ پارلیمنٹ سے منظور کرایا گیا۔

خاتون رکن پارلیمان نیساف نے عراقیہ لسٹ کے ارکان کو خبردار کیا تھا کہ وہ بند کمرے میں قومی میزانیئے پر ہونی والی ووٹنگ میں بجٹ کے حق میں رائے دہی کے استعمال گریز کریں کیونکہ اس میں شیعہ اکثریتی جماعتوں کے مطالبات کو من و عن تسلیم کیا گیا ہے۔

مسسز نیساف نے سلیمان کی دھمکی پر کھڑے ہو کر احتجاج کیا گیا۔ جوابا سلیمان الجمیلی نے ان سے بدکلامی کی، فوری ردعمل کے طور پر خاتون رکن اسمبلی نے اپنا سینڈل سلیمان پر اچھال دیا۔

واقعے کے بعد عراقی نجی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے نیساف نے بتایا کہ میں نے عراقی ممبر پارلیمنٹ کو جوتا ان کے زبان درازی پر مارا تھا کیونکہ انہوں نے براہ راست معاشرتی آداب کی خلاف ورزی کی۔

بہ قول نیساف، تاریخ جمیلی کو کھبی معاف نہیں کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ وہ داد رسی کے لئے متعلقہ قانونی پلیٹ فارم سے بھی رجوع کرنے کا ارادہ رکھتی ہیں۔

اس واقعے پر عراقی سوشل میڈیا پر اپنے ردعمل کا اظہار کر رہے ہیں۔ ایک عراقی شہری نے فیس بک پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اس موقع پر ایک سوال بنتا ہے کہ بازار میں جوتے مہنگے کیوں ہیں؟ جوتوں اور بعث ازم کا آپس میں کیا تعلق ہے کیونکہ نیساف اسی بعث پارٹی کی سابقہ رکن ہیں۔ ایک اور منچلے نے گرہ لگائی کی آئںدہ عراقی ایوان میں جوتے لیجانے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔