.

تیونس کے وسط میں خود سوزی کا مرتکب نوجوان چل بسا

شاہراہ انقلاب پر اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

گزشتہ روز دارلحکومت تیونس میں خود سوزی کی کوشش میں زخمی ہونے والا نوجوان بدھ کے روز زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے اہسپتال میں دم توڑ گیا۔

تفصیلات کے مطابق دارلحکومت کے وسط میں الحبیب بورقیبہ مرکزی شاہراہ میں دوران احتجاج اپنی نوعیت کا یہ پہلا واقعہ ہے۔ یاد رہے کہ سن 2011ء میں اسی شاہراہ پر ہونے والے مظاہروں اور احتجاج کی وجہ سے دو دہائیوں سے ملک پر مسلط زین العابدین کا آمرانہ اقتدار ختم ہوا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق نوجوان نے میونسپل تھیٹر کے سامنے خود پر آتشگیر مادہ چھڑکا اور دیکھتے ہی دیکھتے خود کو آگ لگا لی۔ جائے حادثہ پر موجود شہریوں نے آگ بجھانے کی کوشش کی، تاہم اس دوران نوجوان بری طرح جھلس چکا تھا۔ اسے فوری طور پر ایمبولینس کے ذریعے ہسپتال منتقل کیا گیا۔ ہسپتال لیجائے جانے تک مضروب مکمل ہوش ہو حواس میں تھا، لیکن آج بدھ کے روز ہسپتال ذرائع نے اس کے انتقال کی تصدیق کر دی۔