.

مصر: پارلیمانی انتخابات روکنے کے خلاف صدر مرسی کی اپیل

عدالتی فیصلوں کا احترام کرتے ہیں: ایوان صدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے ایوان صدر اور ہائی الیکٹورل کمیشن نے انتظامی عدالت کے پارلیمانی انتخابات کو روکنے کے فیصلے کے خلاف اپیل دائر کر دی ہے۔

انتظامی عدالت نے گذشتہ بدھ کو 22اپریل کو ہونے والے پارلیمانی انتخابات کو منسوخ کرنے کاحکم دیا تھا اور ترمیم شدہ انتخابی قانون کو نظرثانی کے لیے سپریم دستوری عدالت کو بھیج دیا تھا۔

مصر کے صدر محمد مرسی نے اس قانون کے تحت پارلیمان کے ایوان زیریں کے انتخابات کے چار مراحل میں انعقاد کا اعلان کیا تھا۔صدر مرسی کے دفتر کا کہنا ہے کہ وہ عدالت کا فیصلے کا احترام کرتی ہے۔واضح رہے کہ مصری عدالتیں اب تک صدر مرسی اور ان کی سابقہ جماعت اخوان المسلمون کے خلاف متعدد فیصلے دی چکی ہیں۔

انتظامی عدالت کے مذکورہ فیصلے کے بعد مصر میں جاری سیاسی بحران مزید شدت اختیار کرگیا تھا جبکہ صدر مرسی کو پہلے ہی ملک کی ابتر معیشت سمیت مختلف گوناگوں مسائل کا سامنا ہے اور اس وقت مصر کے زرمبادلہ کے ذخائر انتہائی سطح تک گر گئے ہیں۔

مصری حکومت معیشت کی بحالی کے لیے عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے بھی بات چیت کررہی ہے اور اس کا کہنا ہے کہ وہ آئی ایم ایف سے چار ارب اسی کروڑ ڈالرز کے قرضے کے حصول کے لیے بات چیت کو تیار ہے۔اس پہلے آئی ایم ایف اور مصری حکام کے درمیان بات چیت میں مالیاتی پیکج پر اتفاق رائے نہیں ہوسکا تھا۔