.

غزہ میں حماس کے ٹھکانوں پر اسرائیلی بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی فوج کے ایک اعلان کے مطابق اس کے لڑاکا طیاروں نے بدھ کی شام غزہ پٹی کے مشرقی علاقے میں عین کارمی گذرگاہ کے قریب ’حماس‘ تنظیم کے ایک عسکری کمپاؤنڈ میں واقع ٹھکانے کو بم باری کا نشانہ بنایا۔ یہ کارروائی فلسطینیوں کی جانب سے اسرائیلی فوجی گاڑیوں پر کیے گئے حملے کے رد عمل میں کی گئی۔

بدھ کی شام جاری بیان میں بتایا گیا کہ اسرائیلی فضائیہ نے یہ کارروائی غزہ پٹی کے شمالی علاقے عین کارم میں کی۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان کا کہنا ہے کہ دو فلسطینی شہریوں نے اسرائیلی فوجی گاڑیوں کو آگ لگا دی تاہم وہ سیکیورٹی باڑ عبور نہیں کرسکے۔ یہ واقعہ ماضی میں گذرگاہ کےطورپر استعمال ہونے والی عین کارمی کراسنگ کے قریب پیش آیا۔

واقعےکے بعد غزہ کی سرحد پر مرکز اسرائیلی ٹینکوں اور جنگی طیاروں نے حماس کے مراکز پر بمباری کی۔

فلسطینی ذرائع کے مطابق اسرائیلی فوج نے مشرقی غزہ کی الزیتون کالونی میں حماس کے ٹھکانوں پر بمباری کی۔

دوسری جانب اسرائیلی اخبار ہارٹرز نے اسرائیلی فوج کے حوالے سے بتایا ہے کہ ہفتے کی شب چار فلسطینیوں نے کیسوویم گاؤں کے نزدیک سرحدی باڑ کی خلاف ورزی کی اور ان کے ہاتھوں میں آتشی مواد سے بھری شیشے کی بوتلیں تھی۔

اسرائیلی فوج کی ترجمان نے فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ مذکورہ فلسطینیوں نے سرحد کے نزدیک کاموں میں استعمال ہونے والی ایک بڑی گاڑی میں آگ لگا دی اور فرار ہو گئے۔ تاہم کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا۔