نجم الحسن عارف

نجم الحسن عارف

 سینئر صحافی اور کالم نگار نجم الحسن عارف پاکستان کے مختلف اخبارات اور ٹی وی چینلز سے وابستہ رہ چکے ہیں۔

پنڈورا باکسز کی تجارت زرمبادلہ کا ذریعہ بن سکتی ہے

یہ بات اس حوالے سے باعث شکر ہی کہی جائے گی کہ پاکستان کی حکمرانی پر سیدھے یا الٹے طریقے سے فائز ہونے والوں نے خود کو کبھی بھی روایات کی جکڑ بندیوں کے تابع نہیں کیا ہے۔ مطلب یہ کہ حکمرانی کا ہما کسی کے......

منے کے ابا والا دور ختم!

ٹی وی پر فحاشی و عریانی پھیلانے کا الزام ایک عرصے سے لگتا آیا ہے۔ مگر اہم بات یہ ہے کہ ٹی وی پر فحاشی و عریانی جوں جوں بڑھتی گئی جوئے کم آب کی طرح یہ الزام گھٹتا چلا گیا۔ اب ایسا کوئی الزام ٹی وی پر......

سب اچھا ہے!!

مئی کی 9 تاریخ کو عمران خان کی گرفتاری کے بعد جو واقعات ہوئے وہ کوئی بھی عام سی سطح، سوچ اور معلومات رکھنے والا شخص توقع نہیں کر رہا تھا۔ یکایک احتجاج سے ایسا ہنگامہ برآمد ہوا کہ دیکھا نہ سنا۔ اس کے......

پاکستان بھی لاکھوں شہداء کی یاد گار ہے!

ملک و قوم کو درپیش سنگین ترین مسائل اور چیلنجوں کو دیکھتے ہوئے بے ساختہ قابل اجمیری کا یہ شعر یاد آنے لگا۔وقت کرتا ہے پرورش برسوںحادثہ ایک دم نہیں ہوتاقابل اجمیری 1931 میں پیدا ہوئے اور محض 31 سال کی......

عمران کی گرفتاری اور پریشر ککر

سابق صدر ریٹائڑد جنرل ضیاء الحق مرحوم کے دست راست اور بااعتماد ساتھی بریگیڈیئر صدیق سالک ملک کی تازہ صورت حال میں یاد آنے لگے ہیں۔یہ 1985 کے اواخر کی بات ہے یا اس کے ذرا بعد کی، جب وہ پنجاب یونیورسٹی......

عدالتی اصلاحات کے ایجنڈے کی دوڑ یا مقابلہ؟

پاکستان اور اسرائیل کے درمیان تعلقات کی ان دنوں بہت کچی پکی اور جھوٹی سچی باتیں جاری ہیں۔ اس میں جنرل باجوہ بھی خبروں اور انکشافات کی زد میں رہتے ہیں اور سابقہ حکومت پر بھی ایک خاص انداز سے الزامات کی......

جنرل باجوہ کے 'انٹرویوز ' یا  فوج پر حملے!

جنرل باجوہ ایک مرتبہ پھر وطن عزیز کی سیاست میں ایک اہم موضوع کے طور پر موجود ہیں۔ فوجی سربراہ کے طور پر ان کا ملکی سیاست میں عمل دخل بلا شبہ فیصلہ کن رہا۔ وہ چھ برسوں کے ملکی سیاست کا سب سے اہم باوردی......

پاکستان کے 'لانگ رینج'  میزائل!

بلاشبہ پاکستان مشرق وسطیٰ کا براہ راست حصہ نہیں ہے لیکن مشرق وسطیٰ کے ممالک کے لیے اس کی اہمیت وافادیت ہمیشہ غیر معمولی رہی ہے۔ پاکستان کے جوہری طاقت بننے سے پہلے بھی اس کی مشرق وسطیٰ کے ملکوں کے لیے......