.

سعودی عرب: خود کش حملے ملزمان کو عدالت سے سزا

دس سال پہلے حملے میں امریکی اور برطانوی شہری مارے گئے تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عدالت نے خود کش حملہ کرنے کے جرم میں اپنے ایک شہری کو سزائے موت دس دوسروں کو تین سے بارہ سال تک قید کی سزا سنائی ہے۔ سزا پانے والوں پر الزام تھا کہ انہوں نے دس سال پہلے بحر احمر سے متصل شہر ینبو میں دو امریکی اور دو برطانوی شریوں سمیت کل پانچ غیر ملکیوں کو ہلاک کردیا تھا۔ فوری طور پر ان سزا پانے والوں کے نام نہیں آ سکے تاہم ان کی تعداد بتا دی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مئی 2004 میں غیر ملکیوں کی ہلاکت کا یہ واقعہ القاعدہ کی طرف سے سعودی عرب میں جاری مہم کے نتیجے میں پیش آیا تھا۔ مبینہ طور پر غیر ملکیوں کی سعودی عرب میں موجودگی کے خلاف القاعدہ نے یہ مہم 2003 میں شروع کی تھی۔ سعودی سکیورٹی فورسز نے 2006 کے دوران القاعدہ سے وابستہ بہت سے افراد کا خاتمہ کر دیا یا انہیں گرفتار کر لیا تھا۔

سزا پانے والوں کے ہاتھوں مرنے والوں میں دو امریکی شہری، دو برطانوی شہری اور ایک آسٹریلیا کا شہری شامل تھا۔ ان میں سے ایک کا تعلق القاعدہ کے ایک ایسے سیل سے تھا جو خود کش حملوں میں ملوث تھا۔ تاہم یہ نہیں بتایا گیا کہ اس سیل میں اس ملزم کی پوزیشن کیا تھی۔

عدالت سے سزا پانے والوں کو تیس دن کے اندر اندر اپیل کرنے کا حق حاصل ہے۔ واضح رہے سعودی سکیورٹی فورسز نے 2006 میں القاعدہ سے تعلق کے شبہے میں 1100 کو حراست میں لیا تھا۔