ملائشیا: جاپانی سپر ہیرو الٹرا مین کی خدا سے تشبیہ پر پابندی

الٹرا مین پر کتاب درآمد اور شائع کرنے والوں کو تین سال قید بھگتنا ہو گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ملائشیا میں حکومت جاپانی سپر ہیرو ''الٹرا مین'' سے متعلق ایک طنزیہ کتاب پر نقض امن عامہ کے پیش نظر پابندی لگا دی ہے۔

ملائشیا کی سرکاری خبر رساں ایجنسی برناما نے وزارت داخلہ کا ایک بیان نقل کیا ہے جس کے مطابق''طنزیہ کتاب ''الٹرا مین دی الٹرا پاور'' پر 18 فروری سے پابندی عاید کی گئی ہے اور جو کوئی بھی اس کتاب کو درآمد کرے گا یا شائع کرے گا، اسے تین سال قید بھگتنا ہو گی''۔

اس کتاب کا نام جمعہ کو وزارت کی ویب سائٹ پر ممنوعہ کتب کی فہرست میں شامل کر لیا گیا ہے۔ تاہم وزارت داخلہ کے حکام نے صحافیوں کے رابطہ کرنے پر اس کتاب پر پابندی سے متعلق سوالات کا کوئی جواب نہیں دیا ہے۔ البتہ بیان میں صرف اتنا کہنے پر اکتفا کیا گیا ہے کہ اس سے لوگوں کے جذبات مشتعل ہونے اور نقض امن عامہ کا خطرہ تھا۔

اس کتاب میں الٹرا مین کو خدا سے تشبیہ دی گئی ہے اور اس کے لیے خدا کا لفظ استعمال کیا گیا ہے۔ مالے اور عربی زبان میں یہی لفظ اللہ تعالیٰ کے لیے استعمال ہوتا ہے۔ مقامی اخبار سٹار کی رپورٹ کے مطابق اس طنزیہ کتاب کی سب سے قابل اعتراض سطر وہ ہے جس میں لکھا ہے کہ ''الٹرا مین اللہ کی طرح نظر آتا ہے اور اس کا اسی طرح احترام کیا جاتا ہے جس طرح اللہ کا کیا جاتا ہے یا یہ تمام الٹرا جنگجوؤں کا سب سے بڑا ہے''۔

یاد رہے کہ 1960ء کی دہائی میں جاپان کی ٹیلی ویژن سیریز میں الٹرا مین کا کردار وضع کیا گیا تھا۔ یہ بے پایاں طاقت کا حامل ایک خیالی سپر ہیرو ہے جو زمین کو مختلف بلاؤں اور برے کرداروں سے بچاتا ہے۔

ملائشیا میں حالیہ مہینوں کے دوران عیسائیوں کی جانب سے لفظ اللہ کے استعمال پر بھی تنازعہ چلتا رہا ہے اور گذشتہ اکتوبر میں ایک عدالت نے کیتھولک اخبار پر لفظ اللہ لکھنے پر پابندی عاید کر دی تھی۔ ملائشین وزراء اور اسلامی اسکالروں کا کہنا تھا کہ لفظ اللہ صرف مسلمانوں کے لیے مخصوص ہے اور وہی اس کو استعمال کر سکتے ہیں اور کیتھولک عیسائیوں کو رب کائنات کے لیے یہ لفظ استعمال کرنے یا لکھنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔

مقبول خبریں اہم خبریں