.

برطانوی وزیراعظم کی مصروف شاہراہ پربیٹی سےاٹکھیلیاں

ننھی فلورینس ''واکر" کے بجائے والد کے کندھے پر سواری کرتی رہی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بہ حیثیت انسان اپنے ننھے بچوں سے محبت تو فطری چیز ہے مگر جب وزارت عظمیٰ جیسا عالی منصب مل جائے تو بچوں کے بجائے "عہدے اور اسٹیٹس" زیادہ خیال رکھا جاتا ہے۔ لیکن برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون نے "اسٹیٹس" کے اس بُت کو اپنے پاؤں تلے روندتے ہوئے تین سالہ صاحبزادی کو اپنے کندھوں پر اٹھا کر یہ ثابت کر دیا کہ وہ برطانیہ کے کامیاب وزیراعظم ہی نہیں بلکہ اولاد سے محبت کرنے والے ایک شفیق باپ بھی ہیں۔

اخبار "ڈیلی میل" نے اپنی ایک تازہ اشاعت میں وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون کی کچھ تصاویر شائع کی ہیں، جن میں انھوں نے تین سالہ فلورینس کو "واکر" کے بجائے اپنے کندھوں پراٹھا رکھا ہے۔ رپورٹ کے مطابق وزیراعظم دفتر جانے سے قبل بیٹی کو بچوں کے "کیئر سینٹر" چھوڑنے جا رہے ہیں۔ گھرسے نکتے ہی انھوں نے بیٹی کو کندھوں پر اٹھا لیا اور اس کا "واکر" سمیٹ کر ہاتھ میں اٹھا رکھا ہے۔

بیٹی کو اٹھائے ڈیوڈ کیمرون کی مختلف زاویوں اور لمحات میں تصاویر اتاری گئی ہیں۔ راہ گیر دونوں باپ بیٹی کے درمیان جاری اٹکھیلیوں میں مگن ہیں جبکہ وزیر اعظم لوگوں کی توجہ سے بے پروا نہایت اطمینان کے ساتھ سڑک پر جا رہے ہیں۔

"ڈیلی میل" کی رپورٹ کے مطابق یہ تصاویر چند روز قبل کی ہیں لیکن اُنھیں برطانوی کابینہ کی اجازت کے بعد ہی شائع کیا گیا ہے۔

بچی کو کندھے پر اٹھائے پیدل چل کر "کیئر سینٹر" پہنچانے کے بعد ڈیوڈ کیمرون واپس اپنے دفترپہنچ جاتے ہیں جہاں وہ کابینہ کے اہم اجلاس کی صدارت بھی کرتے ہیں۔ اجلاس میں یوکرین کے سیاسی بحران اور پبلک سیکٹر کے ملازمین کی تنخواہوں پر بحث کی جاتی ہے۔

اخبار مزید لکھتا ہے کہ وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون ہفتہ ، دوہفتے یا کم سے کم ایک مہینے میں اپنے بچوں سے یونہی گھل مل جاتے ہیں۔ کیمرون نے نہ صرف خود کو برطانیہ جیسے بڑے ملک کا ایک کامیاب اور متحرک وزیر اعظم ثابت کیا ہے بلکہ وہ ایک شفیق باپ بھی ثابت ہوئے ہیں جو اپنے اسٹیٹس کی پروا کیے بغیر بچی کو کاندھوں پر بٹھائے چل پڑتے ہیں۔