.

امارات میں دنیا کی پہلی "اسمارٹ ای مارکیٹ" کا آغاز

سیکڑوں اسمارٹ ایپلیکیشنز کے ذریعے کئی سو خدمات کی فراہمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کی حکومت نے اینڈورائڈ اور آئی او ایس پلیٹ فارمز کے ذریعے دنیا کی پہلی اسمارٹ ایپلی کیشن الیکٹرانک مارکیٹ متعارف کرانے میں کامیابی حاصل کر لی ہے۔ مقامی سطح پر تیار کی جانے والی ایک سو اسمارٹ ایپلی کیشنز کے ذریعے صارفین کو ایک چھت تلے 700 قسم کی خدمات مہیا کی جائیں گی۔

متحدہ عرب امارات کے وزیر اعظم اور حاکم دبئی الشیخ محمد بن راشد آل مکتوم نے نئی سروس کی خوبیوں کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔ انہوں نے بتایا کہ مستقبل قریب میں اسمارٹ "ای مارکیٹنگ" کے نیٹ ورک کو مزید وسعت دی جائے گی اور آئند سال کے وسط تک اس اسمارٹ ایپلی کیشن کی مدد سے شہریوں کو کئی دیگر شعبوں میں بھی سہولیات اور رسائی فراہم کی جائیں گی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت اسمارٹ اپیلی کیشن سروسز کو اماراتی شہریوں کے روزمرہ زندگی کا حصہ بنانے کے لیے کوشاں ہے اور سروسز تک زیادہ سہل اور براہ راست رسائی کو یقینی بنانے کی کوشش کر رہی ہے۔ حکومت کی جانب سے جتنی زیادہ اسمارٹ ایپلی کیشن کی سہولیات میسر ہوں گی شہریوں کی زندگی اتنی ہی زیادہ خوشحال اور پُرسکون ہو گی۔

خیال رہے کہ اماراتی حکومت نے عالمی سرچ انجن "گوگل" اور "ایپل" کمپنیوں کے تعاون سے شہریوں کو اسمارٹ الیکٹرانک اسٹور تک رسائی کی سروس مہیا کی ہے۔ اس نئی سروس کے ذریعے صارفین زیادہ پراعتماد اور محفوظ طریقے سے لین دین کے معاملات طے کر سکیں گے۔

اسمارٹ الیکٹرانک اسٹور کی اسمارٹ ایپلیکیشن کی مدد سے شہریوں کو اکنامک سروسز، وزارت لیبر، اکنامک سرکلز، صارفین کے حقوق کے تحفظ کے ساتھ ساتھ تعلیم، صحت، ہنگامی حالت سے نمٹنے، ماحولیات، انفراسٹرکچر، ٹرانسپورٹ، مواصلات حتیٰ کہ سماجی اور مذہبی نوعیت کے فیچرز کی سہولتیں بھی مہیا کی جائیں گی۔