سعودی عرب: دنیا کے طویل قامت ٹاور کی تعمیر کا جلد آغاز

مملکت ٹاورمیں ایک پانچ ستارہ ہوٹل ،اپارٹمنٹس ،دفاتر اور ایک آبزرویٹری ہوگی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے ساحلی شہر جدہ میں دنیا کے سب سے طویل قامت ٹاور کی تعمیر کا بہت جلد آغاز ہورہا ہے۔اس کی لاگت کا تخمینہ ایک ارب تئیس کروڑ ڈالرز لگایا گیا ہے۔

سعودی گزٹ میں شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق یہ ٹاور ایک کلومیٹر طویل ہوگا اور یہ دبئی میں تعمیرشدہ چھے سو فٹ طویل قامت برج خلیفہ کی جگہ لے گا۔گینز بُک آف ورلڈ ریکارڈ کے مطابق یہ اس وقت انسانی ساختہ دنیا کا سب سے طویل قامت ٹاور ہے۔

جدہ میں بحیرہ احمر کے کنارے مملکت ٹاور کی تعمیر میں ستاون لاکھ مربع فٹ کنکریٹ اور اسی ہزار ٹن اسٹیل استعمال ہوگی۔اس میں ایک پانچ ستارہ ہوٹل ،اپارٹمنٹس ،دفاتر اور ایک آبزرویٹری ہوگی۔تاہم بالائی منازل پر کنکریٹ اور اسٹیل کو پہنچانا ایک چیلنج ہوگا۔

تاہم اس حوالے سے برطانوی اخبار ٹیلی گراف نے اسی ہفتے ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ ''جب برج خلیفہ کی تعمیر کی جارہی تھی تو ساٹھ لاکھ مکعب فٹ کنکریٹ کو رات کے وقت درجہ حرارت کم ہونے پر ایک سنگل پمپ کے ذریعے اوپر چڑھایا جاتا تھا۔

اس طرح سعودی عرب میں بھی اس ٹاور کی تعمیر میں اس آپشن کو استعمال کیا جاسکتا ہے۔اس کے علاوہ ساحل سمندر کے نزدیک ہونے کی وجہ سے نمکین پانی کے ساتھ ٹاور کے ڈھانچے کا کھڑا ہونا بھی ایک چیلنج ہوگا۔تکمیل کے بعد اس ٹاور کی دوسو منزلیں ہوں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں