.

اردنی اداکار کا موت کا سین فلماتے ہوئے دنیا سے کُوچ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اردن کے ایک معروف اداکار ٹی وی سیریز کے لیے موت کا سین فلماتے ہوئے جان کی بازی ہار گئے ہیں۔ان کے اس اچانک انتقال پر فن وثقافت کی دنیا سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے گہرے رنج وغم کا اظہار کیا ہے۔

پچپن سالہ محمود السوالقہ کا گذشتہ منگل کو اردن کی ایک ٹی وی سیریز ''خونی بھائی'' کا موت کے لیے ایک سین فلم بند کراتے ہوئے اچانک انتقال ہوا تھا لیکن ابھی تک ان کی موت کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی ہے اور حکام اس واقعہ کی تحقیقات کررہے ہیں۔

ان کے ساتھ مذکورہ ڈرامے مِیں کردار ادا کرنے والے ایک اور اداکار منظر رحین کا کہنا ہے کہ مرحوم ان سے پہلے ہی کہہ رہے تھے کہ وہ اس دنیا کو جلد چھوڑ جائیں گے لیکن ان کے اس طرح اچانک دنیا سے اٹھ جانے سے انھیں گہرا صدمہ پہنچا ہے اور ان کی سمجھ میں کچھ نہیں آرہا ہے کہ ان کے ساتھ کیا معاملہ پیش آیا تھا۔

رحین نے ایک مصری براڈ کاسٹر سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ''مرحوم نے مجھے وصیت کی تھی کہ میں اپنے ہاتھوں سے انھیں دفن کروں''۔واضح رہے کہ محمود سوالقہ فلموں اور ڈراموں میں عرب بدو کا کردار ادا کرنے میں خاص مہارت رکھتے تھے اور وہ اردنی ناظرین میں بہت مقبول تھے۔