.

خلیفہ کے لباس میں ملبوس حقیقی شخصیت یا عام آدمی؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بعض اوقات کسی نمایاں عہدے دار یا سربراہ مملکت کا بہروپ بھرنے والے شخص پر حقیقی شخصیت کا گمان گزرتا ہے اور لوگ اس کو دیکھ کر اصل کردار سمجھ بیٹھتے ہیں۔

کچھ ایسا ہی معاملہ مکہ مکرمہ میں عمرہ کے ایک زائر کے ساتھ پیش آیا ہے۔اس نے خلافت عثمانیہ کے زمانے میں خلفاء کے لباس کے مشابہ ملبوسات زیب تن کر رکھے تھے۔اس کو دیکھ کر لوگ جنگجو تنظیم دولت اسلامی عراق وشام (داعش) کا اعلان کردہ خلیفہ سمجھ بیٹھے ہیں۔

لیکن خلیفہ کا لباس زیب تن کرنے والے یہ صاحب کوئی حقیقی شخصیت نہیں تھے بلکہ وہ تو مکہ مکرمہ میں کعبۃ اللہ کی زیارت اور عمرہ کی زیارت حاصل کرنے کے لیے آئے تھے۔کاکیشیا (داغستان) سے تعلق رکھنے والے ان صاحب نے عمرہ ادا کرنے کے بعد اپنا روایتی لباس زیب تن کر لیا تھا جو عثمانی خلفاء کے لباس کے مشابہ تھا اور ان صاحب کی اسی لباس میں ایک ویڈیو منظر عام پر آئی ہے۔