لندن تھیٹر کا یہود فلمی میلے کی میزبانی سے انکار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

غزہ کی پٹی میں اسرائیلی فوج کی حالیہ جارحیت کے بعد لندن کے ایک تھیٹر نے یوکے یہود فلمی میلے کی میزبانی سے انکار کردیا ہے۔

لندن کے شمالی علاقے کلبرن میں واقع ٹرائی سائیکل تھیٹر میں اسرائیلی سفارت خانے کی اسپانسرشپ کے تحت نومبر میں یہ فلمی میلہ منعقد کیا جانا تھا اور اس میں چھبیس فلمی دکھائی جانا تھیں لیکن تھیٹر نے یہ کہہ کر اس فلمی میلے کی میزبانی سے انکار کردیاہے کہ وہ حالیہ تنازعے کے کسی فریق کی جانب سے فنڈ قبول کرنے کے لیے تیار نہیں ہے۔

ٹرائی سائیکل تھیٹر کے آرٹسٹک ڈائریکٹراندھو روباسنگم نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ''غزہ اور اسرائیل کی صورت حال کے پیش نظر ہم اس بات میں یقین نہیں رکھتے ہیں کہ اس فیسٹیول کو موجودہ تنازعے کے کسی فریق کی جانب سے رقم (فنڈنگ) قبول کرنی چاہیے۔اس لیے ہم نے یو کے جیوش فلم فیسٹیول سے کہا ہے کہ وہ اسرائیلی سفارت خانے کی اسپانسرشپ پر نظرثانی کرے''۔

ٹرائی سائیکل تھیٹر نے یوکے یہود فلمی میلے کے منتظمین کو اپنے وسائل استعمال کرنے کی پیش کش بھی کی ہے لیکن منتظمین کا کہنا ہے کہ ان کے لیے یہ مطالبہ ناقابل قبول ہے۔یہود فلمی میلے کے چئیرمین اسٹیفن مارگولس نے اس صورت حال کو بہت ہی افسوسناک قرار دیا ہے اور تھیٹر پر ایک ثقافتی میلے کو سیاست زدہ کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔

بی بی سی کی ایک رپورٹ کے مطابق ان صاحب کا کہنا ہے کہ ٹرائی سائیکل تھیٹر گذشتہ آٹھ سال سے یہود فلمی میلے کی میزبانی کرتا چلا آرہا تھا۔تھیٹر کے یہود فلمی میلے کی میزبانی سے انکار کے فیصلے کے خلاف لندن میں مقیم بعض یہودیوں نے جمعرات کو ایک احتجاجی ریلی کا اہتمام کیا ہے اور انھوں نے تھیٹر پر یہود مخالف ہونے کا الزام عاید کردیا ہے۔

درایں اثناء لندن کے دی نیشنل تھیٹر کے سربراہ نیکولس ہائیٹنر نے ٹرائی سائیکل تھیٹر کے فیصلے کا دفاع کیا ہے۔انھوں نے کہا ہے کہ ''روباسنگھم نے میلے کے منتظمین سے صرف یہ تقاضا کیا ہے کہ وہ سیاسی غیرجانبداری کو برقرار رکھنے کے لیے اسرائیلی سفارت خانے کی اسپانسرشپ سے دستبردار ہوجائیں''۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں